یہ الیکشن نہیں سلیکشن تھی، جس میں بڑے پیمانے پر دھندلی کی گئی گل، نصیب خان

یہ الیکشن نہیں سلیکشن تھی، جس میں بڑے پیمانے پر دھندلی کی گئی گل، نصیب خان

سخاکوٹ(نمائندہ پاکستان) متحدہ مجلس عمل کے صوبائی امیر مولانا گل نصیب خان نے کہا کہ تمام نتائج کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ یہ الیکشن نہیں بلکہ سلکشن تھا ۔ جس میں بڑے پیمانے پر دھندلی کی گئی ۔فراڈ الیکشن کسی صورت قبول نہیں ۔ دھندلی کے تمام شواہد موجود ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سخاکوٹ میں متحدہ مجلس عمل کے زیر اہتمام ملک بھر میں الیکشن میں مبینہ دھندلی کے خلاف احتجاجی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔احتجاجی جلسہ سے جے یو آئی ضلع ملاکنڈ کے امیر صاحبزادہ خالدجان، ایم ایم اے ضلع ملاکنڈ کے امیر مولانا جمال الدین اور مولانا جاوید خان نے بھی خطاب کیا۔جبکہ اس موقع پر مولاناحبیب الحسن، حق نواز خان ایڈوکیٹ بھی موجود تھے۔انہوں نے کہا کہ اسسٹبلشمنٹ، الیکشن کمیشن اس کے ذمہ دار ہے ۔الیکشن کمیشن نے وہ کردار ادا نہیں کیاجو کہ ہونا چاہئے۔ الیکشن کو کمیشن کو استعمال کیا گیا۔قوم کیساتھ مذاق کیا گیااور ہمارے ایجنٹوں کوالیکشن نتائج فارم 45پر نہیں دئے گیا ۔ فراڈ الیکشن میں الیکشن کمیشن برابر کے شریک ہے ۔انصاف کے تمام تقاضے پامال کئے گئے ۔خواتین پولنگ ایجنٹ کو باہر نکال کر مرد ایجنٹ سے ووٹوں کی گنتی کی گئی انہوں نے کہا کہ عمرا ن خان ملک کو سکیولر، فحاشی وعریانی کی طرف دھکیل رہا ہے ۔مگر جب تک ایم ایم اے کا ایک کارکن موجود ہوگا عمران خان کا یہودی ایجنڈا کو کسی صورت پایہ تکمیل تک نہیں پہنچے گا۔انہوں نے کہا کہ اصل نتائج نکالے گے اور حکومت اس کے حوالے کرینگے جو اس کے حق دار ہے۔انہوں نے کہا کہ قوم تکلیف میں ہے یہ ہمارے احتجاج کا پہلا مرحلہ تھا اس کے بعد ایم ایم اے کی طرف سے ائندہ کے لائحہ عمل کیلئے جو بھی فیصلہ ائے گا اس پر عمل درامد کیا جائے گا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر