پشاور ،نوجوان لڑکے کو قتل کرنیوالا ملزم چند گھنٹوں میں گرفتار

پشاور ،نوجوان لڑکے کو قتل کرنیوالا ملزم چند گھنٹوں میں گرفتار

پشاور(کرائم رپورٹر)کیپیٹل سٹی پولیس پشاور نے 15سالہ لڑکے کو بیدردی سے چھریوں کے وار کرکے قتل کرنے والے ملزم کومحض چند گھنٹوں کے اندر گرفتار کر لیا، گرفتار ملزم کی نشاندہی پر آلہء قتل بر آمد کرکے ملزم کوحوالات منتقل کر دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز نظر محمد ولد فضل خالق سکنہ اخون آباد نمبر 4 اور یا سین علی ولد حضرت علی آپس میں کسی موضوع پہ بحث و تکرار کر رہے تھے کہ اس دوران نظر محمد نے طیش میں آکر یاسین ولد حضرت علی عمر 15 سال کو چریوں کے پے در پے وار کرکے شدید زخمی کر دیا جس کو ہسپتال منتقل کر دیا گیا لیکن زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہو گیا ۔تھانہ پھندو پولیس نے مقتول کے بھائی شوکت علی ولد حضرت علی کی مدعیت میں مقدمہ علت نمبر658 مورخہ 26.7.2018 جرم302 درج کرکے تفتیش شروع کی ۔ایس ایس پی آپریشن جاوید اقبال نے واقعہ کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے ایس پی سٹی شہزادہ کوکب فاروق کوجوان سالہ یاسین علی کے قتل میں ملوث ملزم کو جلد از جلد گرفتار کرنے کا ٹاسک حوالہ کیا۔ ایس پی سٹی شہزادہ کوکب فاروق کی نگرانی میں اے ایس پی گلبہار حسن جہانگیر اور ایس ایچ او تھانہ پھندو عرفان خان نے فوری کارروائی کرتے ہوئے محض چند گھنٹوں کے اندر اندر ملزم نظر محمد ولد فضل خالق سکنہ اخون آباد کو گرفتار کر لیا۔ ملزم نے سرسری انٹاروگیشن کے دوران وقوعہ میں ملوث ہونے کا اعتراف کیا جسکی نشاندہی پر آلہء قتل بھی بر آمد کرکے ملزم کو مزید تفتیش کی خاطر حوالات منتقل کر دیا گیا۔ایس ایس پی آپریشن جاوید اقبال نے ایس پی سٹی شہزادہ کوکب فاروق ، اے ایس پی گلبہار حسن جہانگیر اور ایس ایچ او تھانہ پھندو کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے توصیفی اسناد دینے کا اعلان کیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر