وزارت مذہبی امورنے ایران ،عراق اور شام کی زیارتوں کی پالیسی پر کام شروع کردیا

  وزارت مذہبی امورنے ایران ،عراق اور شام کی زیارتوں کی پالیسی پر کام شروع ...

لاہور(ڈوےلپمنٹ سےل)وزارت مذہبی امور نے اےران ،عراق اور شام کی زےارتوں کی پالیسی پر کام شروع کر دےا،زےارات پالیسی کے تحت حج عمرہ کی مانندٹورز آپرےٹرز ماڈل زائرےن تےار کی جائے گی،زےارت پالیسی کی حج 2019ء کے بعد کابےنہ سے منظوری لی جائے گی،اس بات کا فےصلہ وفاقی وزےر مذہبی امور پےر نور الحق قادری کی صدارت مےں ہونےوالے اجلاس میں ہوا،اجلاس مےں شیعہ علمانے بھی شرکت کی،اجلاس مےں وزےر اعظم کے مشےر برائے(بقیہ نمبر40صفحہ7پر )

اور سےز پاکستانی ذلفی بخاری نے بھی خصوصی شرکت کی ،شیعہ علما مےں علامہ راجہ عباس،علامہ محمد حسےن اکبر،علامہ امےن شہےدی،علامہ عارف واحدی اور غضنفر مہدی نے شرکت کی،اجلاس مےں پارلیمانی سےکرٹری جہانگےر آفتاب اور وفاقی سےکرٹری محمد مشتاق احمد نے شرکت کی، اجلاس مےں اےران اور عراق زےارتوں کی پالیسی کے خدوخال پر اےڈےشنل سےکرٹری وزات مذہبی امور نے برےفنگ دی،اجلاس مےں بتاےا گےا کہ محرم الحرام کے دوران ہر سال 60ہزار سے اےک لاکھ زائرےن اےران، عراق جاتے ہےں ، اےک سال مےں تقرےبا 6لاکھ سے زائد زائرےن اےران،عراق جاتے ہےں ،اےران ،عراق زائرےن کےلیے محرم سے قبل کابےنہ سے منظوری لی جائے گی،پےر نور الحق قادری نے کہا ہے کہ شیعہ علما کے ساتھ مل کر زےارت پالیسی مرتب کرےں گے،زائرےن حج عمرہ کی مانند زےارات پر جائےں گے اور زائرےن کو مکمل سہولےات اور سےکورٹی فراہم کرے گی،زےارات مےں حضرت اما رضا،حضرت امام حسےن;230;،امام عبد القادر جیلانی،امام ابو حنےفہ،بہاوَ الدےن نقشبندی بخاری اور امام مجتبیٰ مزارات شامل ہےں ۔

زیارت پالیسی

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...