حکومت کی سولو فلائٹ پالیسی بھی معیشت کیلئے سود مند نہیں آل پاکستان انجمن تاجران

  حکومت کی سولو فلائٹ پالیسی بھی معیشت کیلئے سود مند نہیں آل پاکستان انجمن ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(این این آئی)آل پاکستان انجمن تاجران کے مرکزی صدر اشرف بھٹی نے کہا ہے کہ حکومت کی سولو فلائٹ پالیسی کسی طرح بھی معیشت کیلئے سود مند نہیں، ہزار مربع فٹ کی دکانوں پر 17فیصد جی ایس ٹی اور چھوٹے دکانداروں پر بجلی کے بلوں کے تناسب سے فکسڈ ٹیکس کے حوالے سے ابہام کیوجہ سے تاجروں کو تشویش ہے،ٹیکس کے حصول کیلئے حکومتی فیصلوں پر آئندہ کے لائحہ عمل کیلئے مشاورت کا سلسلہ جاری ہے جس کا جلد اعلان کیا جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے مختلف مارکیٹوں کے تاجر رہنماؤں سے ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اشرف بھٹی نے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ حکومت صرف تاجروں سے ہی ٹیکس وصولی کرنا چاہتی ہے جو کسی طرح بھی قابل قبول نہیں۔ مذاکرات میں تعطل نہ آنے دیا جائے کیونکہ یہ صورتحال کسی کے بھی حق میں بہتر نہیں۔ ہزار مربع فٹ کی دکانوں پر 17فیصد جی ایس ٹی کی وضاحت سامنے نہیں آئی اور اسی طرح چھوٹے دکانداروں کیلئے بجلی کے بلوں کے تناسب سے فکسڈ ٹیکس کی شرح کیا ہو گی اس پر بھی کچھ نہیں بتایا گیا۔


حکومت کی جانب سے بے پناہ ٹیکسز کے نفاذ کی وجہ سے پہلے ہی کمرشل صارفین کیلئے بجلی کے نرخ انتہائی زیادہ ہیں جس سے یقینی طورپر فکسڈ ٹیکس بھی زیادہ وصول کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت تاجروں کے مطالبات کو سنے کیونکہ موجودہ حالات میں ملک ہڑتالوں اور احتجاج کا متحمل نہیں ہو سکتا اس لئے حکومت کو دو قدم آگے بڑھ کر ہمارے تحفظات دور کرنے چاہئیں۔ انہوں نے کہا کہ ٹیکس کے حصول کیلئے حکومتی فیصلوں پر آئندہ کے لائحہ عمل کیلئے مشاورت کا عمل جاری ہے جس کا جلد اعلان کیا جائے گا۔

مزید :

کامرس -