امریکہ میں کورونا کی ویکسین کیلئے دنیا کا سب سے بڑا تجربہ دوسرے مرحلے میں داخل

امریکہ میں کورونا کی ویکسین کیلئے دنیا کا سب سے بڑا تجربہ دوسرے مرحلے میں ...

  

واشنگٹن (اظہر زمان، بیورو چیف) امریکہ میں سوموار کے روز کورونا وائرس کی ویکسین کی تیاری کیلئے دنیا کا سب سے بڑا تجربہ اگلے مرحلے میں داخل ہوگیا ہے۔ سرکاری طبی ذرائع نے یہ رپورٹ کرتے ہوئے بتایا ہے کہ نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ہیلتھ ایک فارمیسیوٹیکل کمپنی ”موڈرنا“ کے اشتراک سے ویکسین کی اس مخصوص قسم کی آزمائش تیس ہزار رضاکاروں کے پہلے گروپ پر کی جارہی ہے۔ تاہم ان رضاکاروں پر اثرات کا جائزہ لینے کے بعد ہی وثوق سے بتایا جاسکے گا کہ آیا یہ ویکسین کورونا وائرس کو روکنے کیلئے کارگر ثابت ہوتی ہے یا نہیں؟ ان رضاکاروں کو نہیں بتایا جائے گا کہ انہیں اصل ویکسین کا ٹیکہ لگا ہے یا وہ نقلی تھی۔ اس کے بعد یہ تمام رضاکار ان علاقوں میں گھومے پھریں گے جہاں وائرس خاصی تعداد میں موجود ہے۔ اس کے بعد دونوں قسم کے رضاکاروں کی کیفیت دیکھ کر ویکسین کے موثر ہونے کا پتہ چل سکے گا۔ سرکاری ذرائع کے مطابق ویکسین کے تجربے کے لئے ملک میں تقریباً نوے مقامات منتخب کئے گئے ہیں جن میں ریاست جارجیا کا شہر سواناہ شامل ہے جہاں اس ویکسین کے تجربے کا آغاز کیا گیا ہے۔ سرکاری حکام نے بتایا ہے کہ اس وقت دنیا میں ویکسین کی تیاری میں چین اور برطانیہ بہت سرگرم ہیں لیکن امریکہ خود اپنی ویکسین تیار کرنا چاہتا ہے۔

ویکسین تجربہ

مزید :

صفحہ اول -