سٹیل ملز کرپشن کیس، شریک ملزم کے جوڈیشل ریمانڈ میں توسیع

سٹیل ملز کرپشن کیس، شریک ملزم کے جوڈیشل ریمانڈ میں توسیع

  

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت نے پاکستان سٹیل ملز میں 4 کروڑ 82 لاکھ روپے کرپشن سکینڈل کیس میں ملوث شریک ملزم جواد احمد کے جوڈیشل ریمانڈ میں 10 اگست تک توسیع کردی عدالت نے آئندہ سماعت پر مزید گواہان کو بیان قلمبند کرانے کے لئے طلب کر لیا ملزم کو عدالتی حکم پر جوڈیشل ریمانڈ کے بعد جیل سے عدالت میں پیش کیا گیا اس کیس میں دیگر سات ملزمان بطور ریفرنس عدالت میں حاضری کیلئے پیش ہوئے نیب کے ریفرنس میں کل 10ملزمان نامزد ہیں 9 ملزمان کی عدالت عالیہ سے درخواست ضمانتیں منظور ہو چکی ہیں کیس میں ایک ملزم وفات پا چکا ہے جبکہ ایک کو پلی بارگینگ کے بعد رہا کر دیا گیا تھا نیب کی جانب سے کیس کا ریفرنس دائر ہونے کے بعد ملزمان کیخلاف فرد جرم عائد کی جا چکی ہے ملزمان کے صحت جرم کے انکار پر عدالت نے گواہان کو طلب کر رکھا ہے عدالت میں نیب کی جانب سے پیش کیے جانے والے گواہان کے بیان قلمبند کیے جا رہے ہیں مرکزی ملزم ظہور خٹک اور جواد احمد وغیرہ پر پاکستان سٹل میل میں چار کروڑ 82 لاکھ روپے کرپشن کرنے کا الزام عائد کر رکھا ہے نیب کا موقف ہے کہ کیس میں دو ملزمان سرکاری ملازم تھے دیگر پرائیویٹ پارٹنر کے طور پر کام کر رہے تھے نیب کے تفتیشی کا موقف ہے کہ ملزمان نے لوہا بیچنے میں سرکاری خزانے کو گھپلا کرکے نقصان پہنچایا، ملزمان کے خلاف نیب کی جانب سے 2015 میں ریفرنس دائر کیا گیا۔

مزید :

علاقائی -