پنجاب پولیس کی یونیفارم کا کپڑاتبدیل کرنے کا فیصلہ

    پنجاب پولیس کی یونیفارم کا کپڑاتبدیل کرنے کا فیصلہ

  

لاہور(کرائم رپورٹر)ایک بار پھر پنجاب پولیس کی یونیفارم کا کپڑا تبدیل کرنے کا فیصلہ تفصیلات کے مطابق پنجاب پولیس کی یونیفارم کی تبدیلی کا ایک بار پھر ارداہ کرلیا گیا یونیفارم ٹول سے رپس ٹاپ فیبرک پرمنتقل کرنیکی تیاریاں شروع اس کے لئے پری کوالیفائی میں حصہ لینے والی کمپنیوں سے سیمپل منگوائے جا رہے ہیں کپڑے کا جائزہ لیا جا رہا ہے ٹول فیبرک پسینہ جذب نہیں کرتا اور سردی میں سخت ہو جاتا ہے نیا فیبرکس سردی اورگرمی دونوں موسموں میں مفید ہوگا ٹول فیبرک سے یونیفارم تیار کی جا رہی ہے جو کہ رپس ٹاپ پرمنتقل کیا جا رہا ذرائع کا کہناتھا کہ آئی جی پنجاب کو فیبرک اور تمام تجزیے سے آگاہ کر دیا گیا حتمی فیصلہ آئی جی پنجاب کریں گے رواں مالی سال کا کنٹریکٹ نئے فیبرک پر دیا جائے گا موجودہ کپڑے میں ٹراو زر کا وزن زیادہ اور شرٹ کا کم ہے پنجاب پولیس کے لیے ہر سال تمام یونٹس کی وردی اور اس سے ملحقہ دیگر اشیا کے لیے کروڑوں روپے کے فنڈز مختص کیے جاتے ہیں جس میں سب سے بڑی خریداری پولیس کی وردی کی ہوتی ہے۔

واضح رہے کہ اعلیٰ افسران کی عدم دلچسپی کی وجہ سے پنجاب پولیس کی یونیفارم رواں سال تاخیر کا شکار ہوگئی تھی،لاہور سمیت پنجاب پولیس کے لیے اڑھائی لاکھ کے قریب یونیفارم خریدے جانے تھے مگر اس وقت ری سیمپلنگ نہیں کی جاسکی۔ ڈیڑھ ماہ پہلے جمع کرائے گئے سیمپلز معیاری نہ ہونے کی وجہ سے مسترد کردیئے گئے تھے۔

مزید :

علاقائی -