قربانی کااصل فلسفہ تذکیہ نفس ہے، عامر عبداللہ محمدی

          قربانی کااصل فلسفہ تذکیہ نفس ہے، عامر عبداللہ محمدی

  

کراچی (پ ر)ممتاز عالم دین علامہ ڈاکٹرعامرعبداللہ محمدی نے کہا ہے کہ قربانی کااصل فلسفہ تذکیہ نفس ہے جوکہ تمام اعمال صالحہ کی بنیاد ہے، جانور کو نمودونمائش ورسم ورواج تک محدود کرنا قربانی کے مقاصد کے منافی ہے، قربانی کیلئے اخلاص نیت ضروری ہے، وہ جماعت غربااہلحدیث کے مرکز جامع مسجدمحمدی برنس روڈپر خطبہ جمعہ دے رہے تھے۔علامہ ڈاکٹرعامرعبداللہ محمدی نے مزیدکہاکہ یہ مہینہ تکبیرات حمدوثنا اور باہمی ایثاروقربانی کاھے،اس ماہ ذالحجہ میں غرباومساکین کاخیال رکھناچاہیے اور قربانی کے وقت حضرت ابرہیم واسمعیل علیہ السلام کی اللہ کی راہ میں قربانی کومعیاربناناچاہیے، اللہ کے یہاں جذبہ ابرہیمی کی فوقیت ہے ہمیں اپنے تمام معاملات زندگی میں اس جذبہ کو اجاگرکرنے کی ضرورتھے۔ انہوں نے کہا آج معاشرہ میں اسلامی شعائر بھی محض رسم ورواج ونمود ونمائش تک محدود ہوگئے ہیں،ہمیں گناہوں وبرائیوں سے اپنے نفس کی قربانی دینی چاہیے اورگناہوں سے تائب ہوکراپناتزکیہ نفس کرناچاہیے تاکہ ہماری قربانی وتمام نیک اعمال اللہ کی بارگاہ میں قبولیت کادرجہ حاصل کرسکتاہے۔

مزید :

صفحہ آخر -