کراچی، ڈرائیونگ لائسنس، برانشز بند ہونے سے شہری کو شدید مشکلات کا سامنا

کراچی، ڈرائیونگ لائسنس، برانشز بند ہونے سے شہری کو شدید مشکلات کا سامنا

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) کراچی میں تاحال ڈرائیونگ لائسنس برانچز بند ہونے سے شہری شدید مشکلات کا شکار ہوگئے۔ گزشتہ دنوں متعلقہ حکام کی جانب سے ایس او پیز کے تحت ڈرائیورنگ لائسنس برانچز کھولنے کھولنے کی درخواست پر اعلیٰ حکام نے کوئی جواب نہیں دیا جس کی وجہ سے لائسنس برانچز نہیں کھل سکیں۔ ڈرائیونگ لائسنس برانچز کھلنے کی صرف خبریں ہی اخبارات کی زینت بن سکیں تاہم اعلیٰ حکام تاحال کسی بھی نتیجے پر نہیں پہنچ سکے۔ ٹریفک پولیس نے شہر کے مختلف سگنلز پر موٹر سائیکل سواروں کو روک کر لائسنس نہ ہونے پر چالان کرکے بائیک چلانا دشوار کردیا۔ تفصیلات کے مطابق 18 مارچ سے کلفٹن، کورنگی اور ناظم آباد میں واقع تینوں ڈرائیونگ لائسنس برانچز کورونا وائرس کے باعث بند ہیں جس کے باعث ڈرائیونگ لائسنس کے حصول میں شہریوں کو مشکلات کا سامنا ہے۔ہزاروں شہری اپنے ڈرائیونگ لائسنس بنوانے سے محروم ہیں جبکہ اکثریت ڈرائیورز ڈرائیونگ لائسنس کی تجدید کرانے اور لرننگ لائسنس سے پکا لائسنس بنوانے کے لئے خوار ہورہے ہیں۔ گزشتہ دنوں ڈی آئی جی ٹریفک نے بتایا تھا کہ کراچی سمیت سندھ بھر میں ڈرائیونگ لائسنس برانچز کھولنے کی تیاریاں مکمل ہیں۔ ڈی آئی جی ٹریفک ڈی ایل قمر زمان نے بتایا تھا کہ 4 سے کورونا وائرس کے باعث کراچی میں 3 اور سندھ بھر میں 32ڈرائیونگ لائسنس برانچز بند کی گئی تھیں تاہم شہر قائد سمیت صوبے میں عوام کو ڈرائیونگ لائسنس کے حصول میں دشواریوں کے خاتمے کیلئے ایس او پیز کے تحت ڈی ایل برانچز کھولنے کی تیاریا ں کررہے ہیں۔ اس سلسلے میں متعلقہ حکام کے توسط سے محکمہ داخلہ سندھ سے ایس او پیز کے تحت برانچز کھولنے کی درخواست بھی کی گئی تھی۔ اس کے باوجود تاحال ڈرائیونگ لائسنس برانچز نہیں کھولی جاسکی ہیں۔ ڈی ایس پی آپریشن اینڈ سیکورٹی سعید احمد آرائیں نے بھی بتایا تھا کہ شہریوں کو ریلیف دینے کیلئے ڈرائیونگ لائسنس برانچز کھولنے کے لئے اقدام اٹھارہے ہیں۔ امید ہے عوام کا لائسنس کے حصول کیلئے دیرینہ مسئلہ جلد حل ہوجائیگا۔ دوسری جانب شہر میں ٹریفک پولیس اہلکار موٹر سائیکل سواروں اور دیگر گاڑیوں کو نشانہ بناتے ہوئے ڈرائیونگ لائسنس پر شہریوں کا چالان کررہے ہیں۔ شہر کے اکثریت سگنل پر کھڑے ٹریفک پولیس اہلکار شہریوں کو روک روک کر ان سے ڈرائیونگ لائسنس مانگتے ہیں اور لائسنس نہ ہونے پر چالان کئے جارہے ہیں۔ شہریوں نے بتایاکہ ایک طرف تو حکومت سندھ نے ڈرائیونگ لائسنس برانچز بندکرکے عوام کو پریشانی سے دوچار کیا ہوا ہے اور دوسری طرف ٹریفک پولیس بھی شہریوں کی پریشانی میں اضافہ کررہی ہے۔ شہریوں نے حکومت سندھ سے مطالبہ کیاہے کہ ڈرائیونگ لائسنس برانچز جلد از جلد کھولی جائیں تا کہ ہزاروں شہری لائسنس بنوا کر پریشانی سے نجات حاصل کرسکیں۔

مزید :

صفحہ آخر -