حریفوں کیلئے دہشت کی علامت سمجھے جانے والے مائیک ٹائسن نے 15 سال بعد دوبارہ رنگ میں قدم رکھ دیا

حریفوں کیلئے دہشت کی علامت سمجھے جانے والے مائیک ٹائسن نے 15 سال بعد دوبارہ ...
حریفوں کیلئے دہشت کی علامت سمجھے جانے والے مائیک ٹائسن نے 15 سال بعد دوبارہ رنگ میں قدم رکھ دیا

  

واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن) حریفوں کیلئے دہشت کی علامت سمجھے جانے والے ورلڈ ہیوی ویٹ چیمپین مائیک ٹائسن نے 15 سال بعد دوبارہ رنگ میں قدم رکھ دیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق مائیک ٹائسن 15 سال بعد رنگ میں قدم رکھتے ہی 51 سالہ معروف باکسر جونز جونیئر سے مقابلہ کریں گے اور یہ میچ 12 ستمبر کو لاس اینجلس میں منعقد ہو گا جبکہ مائیک ٹائسن نے مقابلے کے شاندار ہونے کی توقع ظاہر کی ہے۔

واضح رہے کہ مائیک ٹائسن کو سال 1997ءمیں ایک مقابلے کے دوران اپنے حریف ایونڈر ہولی فیلڈ کے دائیں کان کو دانتوں سے کاٹنے کے جرم میں باکسنگ کے شعبے میں نااہل قرار دے دیا گیا تھا۔

یاد رہے کہ مائیک ٹائسن اپنے دور کے ایک جنونی باکسر تھے جنہوں نے 20 سال کی عمر میں ورلڈ باکسنگ کونسل، ورلڈ باکسنگ ایسوسی ایشن اور انٹرنیشنل باکسنگ فیڈریشن کا ورلڈ ہیوی ویٹ ٹائٹل جیت کر نیا ریکارڈ قائم کیا تھا۔

اپنے پورے کیریئر کے دوران انہوں نے 58 مقابلوں میں حصہ لیا جن میں سے 50میں وہ کامیاب رہے جبکہ 6 میں انہیں شکست ہوئی اور دو کا کوئی نتیجہ نہ نکل سکا، انہوں نے44مقابلوں میں اپنے حریفوں کو ناک آؤٹ کیا۔

مزید :

کھیل -