مائرہ قتل کیس،پولیس نے رپورٹ دوبارہ پراسکیوشن ونگ جمع کرادی

مائرہ قتل کیس،پولیس نے رپورٹ دوبارہ پراسکیوشن ونگ جمع کرادی

  

لاہور(نامہ نگار)ڈیفنس میں مائرہ نامی لڑکی کے قتل کیس میں پولیس کی جانب سے پراسیکیوشن کے اعتراضات دور کر کے رپورٹ دوبارہ پراسکیوشن ونگ جمع کرادی گئی جس میں کہا گیا ہے کہ مائرہ کے قتل کی اطلاع اسکی دوست نے واٹس ایپ پر دی اس لئے کال ریکارڈنگ کو ریکارڈ کا حصہ نہیں بنایا جا سکتا  معاملے کی سنگینی اور غور و خوض کے بعد مقدمہ درج کیا گیا ہے،اس لئے مقدمہ کے اندراج میں تاخیر ہوئی،رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ملزمان وقوعہ کے وقت موبائل فون منصوبہ بندی کے تحت اسلام آباد رکھ کر آئے تھے جس وجہ سے کال ڈیٹا لینا ضروری نہیں تھا جبکہ موبائل اسلام آباد ہونے پر جیو فینسنگ بھی بے معنی ہے،رپورٹ میں مزیدکہا گیا ہے کہ موبائل کی فرانزک رپورٹس آنے پر وہ بھی چالان کے ساتھ لف کر دی جائیں گی، ملزمان کو سزا دلوانے کے لئے شہادتیں ریکارڈ پر موجود ہیں،سزا کے لئے شناخت پریڈ،گواہان کے بیانات،آلہ قتل،استعمال شدہ گاڑی اور ڈی این اے رپورٹ موجود ہے،رپورٹ میں استدعا کی گئی ہے کہ پراسیکیوشن ونگ پولیس چالان کو متعلقہ عدالت بھجوائے۔

 تاکہ مقدمہ کاٹرائل شروع ہو سکے۔

مزید :

علاقائی -