قادیانیوں کو آئین و قانون کا پابند بنایا جائے،علماء

  قادیانیوں کو آئین و قانون کا پابند بنایا جائے،علماء

  

لاہور(پ ر)علماء نے ملک بڑھتی ہوئی قادنیوں کی سر گرمیوں پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ قانون نافذ کر نے والے ادارے قادیانیوں کو پاکستان کے آئین وقانون کا پابند بنا نے میں اپنا فرض ادا کریں،عید قر بان پر قادیانیوں کی طرف سے اجتماعی قربانی اور کھالوں کا جمع کر نا انتہائی افسوسناک اور تشویشناک عمل ہے،قر بانی شعائر اسلام میں سے ہے اس عمل کو غیر مسلم نہیں کرسکتے ہیں،عقیدہ ختم نبوت انتہائی حساس نوعیت کا مسئلہ حکمرانوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ اس حوالے ایسی حرکت کر نے والوں کے خلاف فوری طور پر قانون حرکت میں لاتے ہوئے انہیں گرفتار کریں اور ان کے خلاف قانون کاروائی کریں ان خیالات کا اظہار مولانا اللہ وسایا، مولانا محمد امجد خان، علامہ رانا شفیق پسروری، مولانا صفی اللہ، مولانا عزیز الرحمن ثانی،مولانا نعیم الدین، مولاناغلام مصطفیٰ، مولانا جمیل الرحمن اختر، مولانا محب النبی،مفتی عبد الحفیظ،مولانا عبدالنعیم اور دیگر اپنے مشترکہ اخباری بیان میں کیا۔

 علماء نے کہاکہ امت مسلمہ نے سب سے زیادہ قر بانیاں عقیدہ ختم نبوت وناموس رسالت کے تحفظ کے لیئے دی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ کچھ عرصے سے قادیانیوں کی بڑھتی ہوئی سر گرمیاں انتہائی تشویش کا باعث ہیں۔ انہوں نے کہاکہ قوم عقیدہ ختم نبوت اور ناموس رسالت کا تحفظ کر نا اپنا فرض منصبی سمجھتی ہے۔ انہوں نے کہاکہ قادیا نیوں نے ہمیشہ دین اسلام اور پاکستان کے ساتھ غداری کی ہے انہوں نے کہاکہ علماء اور عوام منکرین ختم نبوت اور قادیانیوں کا ہر جگہ تعاقب جاری رکھیں گے۔ انہوں نے کہاکہ عقیدہ ختم نبوت و ناموس رسالت کے قانون کا تحفظ کے لئے عوام اور علماء اپنا کردار ادا کرتے رہیں گے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -