مولی کی کاشت کیلئے زمین کی تیاری پر خصوصی توجہ دینے کی ہدایت

مولی کی کاشت کیلئے زمین کی تیاری پر خصوصی توجہ دینے کی ہدایت

  

فیصل آباد  (اے پی پی) محکمہ زراعت کے ترجمان نیکاشتکاروں کو  مولی کی کاشت کیلئے زمین کی تیاری پر خصوصی توجہ دینے کی ہدایت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بارشوں کے دوران نیچی جگہوں پر پانی زیادہ دیر کھڑا ہونے اور اونچی جگہوں پر کم پانی سے فصل متاثر ہونے کا خدشہ ہوتاہے لہذاکاشتکار مولی کی کاشت کیلئے زمین کی تیاری پر خصوصی توجہ دیں۔انہوں  نے کہاکہ مولی کی 40دن والی قسم گرمی برداشت کرنے کے علاوہ 40سے55دن کے دوران برداشت کے قابل ہوجاتی ہے، اگیتی مولی کی کاشت دریا، نہر یا راجباہ کے قریب ذرخیز میرا زمینوں پر کریں تاکہ مولی کی جڑکی بڑھوتری زیادہ ہو اور اچھی کوالٹی کی فصل حاصل ہوسکے۔انہوں نے اے پی پی کو بتایا کہ زمین کی تیاری کے بعد اور کھیلیاں نکالنے سے پہلے ایک بوری ڈی اے پی اور ایک بوری سلفیٹ آف پوٹاش فی ایکڑ استعمال کی جائے کیونکہ پوٹا ش کی کھاد جڑ والی فصلوں کیلئے نہایت ضروری ہے۔مزید برآں یہ کھاد اگیتی مولی کو زیادہ درجہ حرارت اور گرمی کی شدت سے محفوظ رکھتی ہے۔انہوں نے کہاکہ کاشتکار مولی کی فصل 60سینٹی میٹر کی پٹریوں کے دونوں کناروں پر بذریعہ چوکا یا کیرا کریں۔اور اس مقصد کیلئے 3 سے 4کلو گرام بیج فی ایکڑ استعمال کریں تاہم اگر بوائی بذریعہ چھٹہ کرنا مقصود ہوتو 4سے 5کلوگرام بیج میں سے آدھا بیج کھیت کی لمبائی کے رخ اور آدھا بیج کھیت کے چوڑائی کے رخ یکساں چھٹہ کرکے رجر کے ذریعے کھیلیاں بنائیں تاکہ اچھی کاشت کو یقینی بنانے میں بھرپور مدد مل سکے او ر کاشتکاروں کو فائدہ ملے۔

مزید :

کامرس -