کرم پار سڑک کیلئے 30کروڑ روپے اور 5 آبنوشی ٹیوب ویل کی منظوری 

کرم پار سڑک کیلئے 30کروڑ روپے اور 5 آبنوشی ٹیوب ویل کی منظوری 

  

سرائے نورنگ (نمائندہ پاکستان)حلقہ پی کے 92سے منتخب رکن صوبائی اسمبلی اور سابق صوبائی وزیر ڈاکٹر ہشام انعام اللہ خان نے کرم پار سڑک کے لئے 30کروڑ روپے اور پانچ آبنوشی ٹیوب ویل کی منظوری کااعلان کردیا۔گزشتہ روز لنڈیواہ میں شمولیتی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر ہشام انعام اللہ خان نے کہاکہ تحریک انصاف کی حکومت پسماندہ علاقوں کی تعمیر و ترقی اور خوشحالی کے لئے ٹھوس اقدامات اٹھارہی ہے تاکہ پسماندہ علاقوں کے عوام ترقی کے دور میں شامل ہو انہوں نے کہاکہ پچھلے سالوں میں ان کی ذاتی کوششوں سے مجتلف مدوں میں ضلع لکی مروت کے لئے اربوں فنڈز منظور ہوئے جن میں صحت۔تعلیم۔رابطہ سڑکیں۔بجلی سمیت دیگر منصوبے شامل ہے انہوں نے کہاکہ عوامی خدمت سے غافل نہیں ہے انہوں نے مخالفین پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ مخالفین کو لکی مروت کی ترقی ہضم نہیں ہورہی ہے اور ترقیاتی منصوبوں میں رکاوٹیں ڈال رہے ہیں انہوں نے جے یوآئی کے ایم پی اے منور خان کو چیلنج دیاکہ اگر ان میں ہمت ہے تووہ استعفی دے ان کو سبق سکھائیں گے مزید کہاکہ ضلع کے  تمام صوبائی حلقوں میں بلا تفریق کام کر رہے ہیں کیونکہ ضلع کو 15 سالوں سے پسماندہ رکھا گیا ہے۔ اقتدار میں آتے ہی مواصلات کا نظام ٹھیک کرنے کیلئے سڑکوں پر کام شروع کیا۔آبنوشی کے مسئلے کومکمل طورپرحل کرنے کیلئے دوارب روپے خرچ کررہے ہیں۔اگلے دوسالوں میں ہرگھرکوپینے کاصاف پانی فراہم کرنے کاعزم لئے ہوئے ہیں انہوں نے اس عزم کااعادہ کیاکہ تحریک انصاف کی حکومت اپنی آئینی مدت پوری ہونے تک ضلع لکی مروت کے بڑے مسائل حل ہوں گے۔انہوں نے لکی مروت کے پسماندہ علاقہ کرم پار کے عوام کا دیرینہ مسئلہ سڑک کی تعمیر کے لئے 30کروڑ روپے اور پانچ آبنوشی ٹیوب ویلوں کی منظوری کااعلان کرتے ہوئے کہا کہ کرم پار کے عوام کو درپیش مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کریں گے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -