صوابی،خاتون کو ایک سال محبوس رکھنے پر 3 بھائیوں کو گرفتار کرلیا گیا  

صوابی،خاتون کو ایک سال محبوس رکھنے پر 3 بھائیوں کو گرفتار کرلیا گیا  

  

تورڈھیر(نمائندہ خصوصی)سفاک بھائیوں کا سگی بہن پر ظلم انتہا، بہن کو ایک سال سے زنجیروں سے باندھ کر کمرے میں محبوس رکھا، صوابی پولیس نے خفیہ اطلاع پر محبوس خاتون کو بازیاب کرالیا،تین ملزمان سائرخان،فہیم خان اور ندیم خان ساکنان درہ (صوابی) کوگرفتار کرلیاجبکہ چوتھے ملزم انجم خان کی گرفتاری کے لیے کوششیں جاری ہیں ملزمان کے خلاف زیر دفعات 354,342,506/34مقدمہ درج رجسٹرڈ،وجہ عناد بھائیوں نے بہن کو نوکری سے روکنے اور خاوند کے خلاف کیس لڑنے سے روکنے کے لئے گردن اور ٹانگ پر زنجیریں باندھ کر قید کیا تھا. ڈی پی او صوابی محمد شعیب خان کی پریس کانفرنس، تفصیلات کے مطابق صوابی پولیس کو خفیہ اطلاع ملی کہ دیہہ درہ صوابی میں ایک خاتون مسما(ح) کو زنجیروں سے باندھ کر کمرے میں محبوس کیا گیا ہے۔ اس اطلاع پر ڈی پی او صوابی محمد شعیب خان کی خصوصی ہدایت پر ڈی ایس پی صوابی سٹی بشیر احمد یوسفزئی کی قیادت میں ایس ایچ او صوابی سب انسپکٹر عجب درانی نے فوری کامیاب کاروائی کرتے ہوئے مکان کے کمرے سے محبوس خاتون جسکی گردن اور ٹانگ کو زنجیروں سے باندھا گیا تھا، کو بازیاب کراکر تین ملزمان بھائیوں سائر خان،فہیم خان اور ندیم خان ساکنان درہ کو گرفتار کیا جبکہ چوتھے کی گرفتاری کوششیں جاری ہیں ملزمان نے اپنی سگی بہن کو ایک سال سے زنجیروں میں باندھ کر بغیر پنکھے کمرے میں حس بیجا میں رکھا ہوا تھا.متاثرہ خاتون شوہر سے طلاق لے چکی ہے اور اس کے دو بچے ایک بیٹا اور ایک بیٹی ہے. جس پر اس نے اپنے بچوں کیخرچ و اخراجات کے سلسلے میں عدالت سے رجوع کیا تھا اور نوکری کرنا چاہتی تھی تا ہم صفاک بھائیوں نے اسے نوکری کرنے اور عدالتی کیس سے روکنے کے لئیکمرے میں زنجیروں سے باندھ کر ایک سال سے کمرے میں محبوس رکھا ہوا تھا

مزید :

پشاورصفحہ آخر -