کشمیر کے انتخابی نتائج کو کبھی تسلیم نہیں کرینگے،فضل رازق خان 

کشمیر کے انتخابی نتائج کو کبھی تسلیم نہیں کرینگے،فضل رازق خان 

  

کاٹلنگ(نمائندہ پاکستان)  مسلم لیگ ن کے صوبائی رہنما اور پی کے 49کے سابق امیدوار حاجی فضل رازق خان نے کہا ہے کہ کشمیر انتخابات جمہوریت کے نام پر جمہوریت کے ساتھ بھونڈا مذاق ہے۔ سلیکشن نے الیکشن کے منہ نوچ لیا ہے۔ ووٹ کے تقدس کو پامال کرکے اقتدار اعلیٰ پر ڈاکہ ڈالا گیا ہے۔ تاریخ انتخابی نتائج کو کبھی بھی تسلیم نہیں کریں گے۔ ان خیالات کا انہوں نے کاٹلنگ میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ انتخابی مہم پوری دنیا نے دیکھ لی۔ اور نتائج دیکھ کر ورطہ حیرت میں پڑ گئے ہیں۔ ووٹ مسلم لیگ ن کو زیادہ ملتے ہیں مگر نشستیں صرف چھ۔  انہوں نے انتخابی نتائج کو جمہوریت کے لئے بھیانک خواب سے تعبیر کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح نہ صرف ہم اس ملک میں جمہوریت قائم رکھ سکتے ہیں اور نہ ہی عام آدمی کے حقوق کو تحفظ کو یقینی بنا سکتے ہیں۔ انتخابی مہم میں امیدوار وں کی دوڑ دھوپ معنی نہیں رکھتی۔ کیونکہ سب کچھ سلیکیٹڈ ہوتے ہیں۔ اگر ایسا ہے تو خدارا انتخابات کے ڈرامہ کیوں رچایا جارہا ہے۔ ایک کشمیر کا سودا تو ہم کرچکے ہیں اور آزاد کشمیر کی حیثیت بھی خطرات سے دوچار ہے۔ کیونکہ ایک مخصوص ایجنڈے کے تحت عمران نیازی کشمیر کو صوبہ بنانے کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہے۔ جس کا مطلب ہے کہ ہم مقبوضہ جموں کشمیر سے دستبردار ہوگئے ہیں۔ اور یہ پاکستان کے سا لمیت کے منافی ہے۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -