پلاننگ کے تحت کراچی کو تباہ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے،مصطفی کمال

  پلاننگ کے تحت کراچی کو تباہ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے،مصطفی کمال

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین مصطفی کمال نے کہا ہے کہ لاوا پک رہا ہے، پلاننگ کے تحت کراچی کو تباہ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے، کورونا کے وجہ سے ہزاروں لوگوں کی نوکریاں ختم ہوگئیں۔منگل کواحتساب عدالت کراچی میں میڈیا سے گفتگو میں مصطفی کمال نے کہا کہ کراچی میں لاوا پک رہا ہے۔ پچھلے تیرا سال سے پیپلز پارٹی کی حکمرانی ہے۔ لیکن پچھلے تین سال سے ایسا لگ رہا ہے، حکومت نہیں بادشاہت ہے۔انہوں نے کہا کہ کراچی کے لوگوں کو پینے کا پانی چوری کرکے پیسوں پر بیچ رہے ہیں۔ بچوں کو کتے کاٹ رہے ہیں، لیکن کوئی بچانے والا نہیں ہے۔ حیدرآباد میں پی ایم ٹی اتار کر لیکر جاتے ہیں، لوگ چندہ کرکے بناتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ وفاقی میں عمران خان کی حکومت کو چلانے کے لیے پیپلز پارٹی کی سپورٹ ضروری ہے۔ زرداری صاحب عمران خان کی وفاقی حکومت چلوارہے ہیں۔ زرداری، نواز شریف کے ساتھ کھڑے ہوجائیں تو ایک منٹ میں حکومت گرادیں گے۔ نواز شریف اس وقت ٹارگٹ نمبر ون ہے، اس لیے زرداری صاحب کو کھلی چھوٹ دی گئی ہے۔ ہم ظلم کو زیادہ برداشت نہیں کر سکتے، عوام تھک گئی ہے۔مصطفی کمال نے کہا کہ کورونا وائرس کے وجہ سے ہزاروں لوگوں کی نوکریاں ختم ہوگئیں ہیں۔ لوگوں نے دکانیں کھولیں تو کورونا کے بہانے وہ بھی بند کرادی گئیں۔ کیا کورونا ٹائمنگ سے آتا ہے؟ عجیب قسم کے طریقے استعمال کیے جارہے ہیں۔ ایسا لگتا ہے ایک پلاننگ کے تحت کراچی کو تباہ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔چیئرمین پی ایس پی نے کہا کہ ہم نے امن کی خاطر اپنا خون دیا ہے۔ ہم سندھ حکومت کی زیادتیوں کو نہیں برداشت کریں گے۔ اگر ہم را سے لڑسکتے ہیں تو پیپلز پارٹی سے بھی لڑ سکتے ہیں۔ ظلم کو خاموشی سے سہنا گناھ ہے۔ ہم نے اس وقت نہیں ڈرے، جب سچ بولنا زیادتی ہوتی تھی۔ سندھ پیپلز پارٹی کی جاگیر بنایا گیا ہے۔ لوکل گورنمنٹ الیکشن نہیں کر پا رہے۔ 23 سو ارب آپ نے ایجوکیشن پر خرچ کردیے کہاں گیا وہ پیسا؟انہوں نے کہا کہ کراچی اور حیدرآباد والوں کو عمران خان کی حکمرانی کی قیمت چکانی پڑ رہی ہے۔ عوام رل گئے، کچرا نہیں اٹھایا جارہا، پینے کا پانی بھی نہیں ہے۔ صرف دکانیں بند کرکے ہی کورونا کا پھیلا روکا جاسکتا ہے؟

مزید :

پشاورصفحہ آخر -