سندھ حکومت طلباء کے مستقبل کو خطرے میں ڈال رہی ہے،خرم شیر زمان

   سندھ حکومت طلباء کے مستقبل کو خطرے میں ڈال رہی ہے،خرم شیر زمان

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)پاکستان تحریک انصاف کراچی کے صدر و رکن سندھ اسمبلی خرم شیر زمان نے سندھ میں انٹرمیڈیٹ کے امتحانات میں نقل اور پرچہ آوٹ ہونے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ سندھ میں حکومتی نااہلی تعلیمی نظام اور طلباء کے مستقبل کو خطرے میں ڈال رہی ہے۔ سندھ میں امتحانی مراکز میں نقل اور پرچے آؤٹ ہونے کا سلسلہ روایتی انداز میں جاری ہے۔پارٹی سیکریٹریٹ انصاف ہاوس سے جاری اپنے بیان میں خرم شیر زمان کا مزید کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کے پرچی چیئرمین نے صوبے کے طالب علموں کو بھی پرچی میں لگادیا ہے۔جب کوئی وزراء کی نالائقیوں پر بات کریں تو یہ ذمہ داری ایک دوسرے پر ڈال دیتے ہیں۔ سندھ میں تعلیمی نظام کو باقائدہ منظم سازش کے تحت تباہ کیا جارہا ہے۔ صوبے کا مستقبل روشن ہو، سندھ حکومت اور انتظامیہ کی ایسی نیت ہی نہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ  سندھ حکومت کی کرپشن اورناقص طرز حکمرانی کی وجہ سے تعلیم، صحت اور دیگر شعبوں میں سندھ دیگر صوبوں سے پیچھے رہ گیا ہے۔سندھ کے اسکولوں اور کالجوں میں معیاری تعلیم کی سہولیات موجود نہیں۔ سندھ کے تعلیمی ادارے کہیں وڈیروں کے اوطاق بنے ہوئے ہیں تو کہیں انہیں بھینسوں کے باڑے میں تبدیل کردیا گیا ہے۔ خرم شیر زمان کا مزید کہنا تھا کہ سندھ حکومت نے تعلیم کا جنازہ نکال دیا ہے،وزیر تعلیم نے سندھ کے نوجوانوں کا مستقبل داؤ پر لگا دیا ہے۔امتحانات میں نقل کی روک تھام کے لئے سندھ حکومت نے کوئی اقدامات نہیں کئے۔ امتحانی مراکز میں بد انتظامی کی صورتحال کے پیش نظر رینجرز کو طلب کیا جائے۔انہوں نے مزید کہا کہ وفاقی حکومت سندھ کے تعلیمی نظام کی ابتر حالت پر اپنا کردار ادا کرے۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -