پاکستان میں گریفائٹ کے وسیع ذخائر موجود ہیں، یعقوب شاہ 

پاکستان میں گریفائٹ کے وسیع ذخائر موجود ہیں، یعقوب شاہ 

  

اسلام آباد(آئی این پی)پاکستان میں گریفائٹ کے وسیع ذخائر، جدید کان کنی، پروسیسنگ اور مارکیٹنگ کی جائے تو عالمی منڈی میں بڑا حصہ حاصل کرنے میں مدد مل سکتی ہے،عالمی گریفائٹ مارکیٹ سال 2027 تک 21 ارب ڈالر ہو جائے گی،کاٹلنگ مردان، زیریں بونیر اور مالاکنڈ کے علاقے گریفائیٹ سے مالامال۔ویلتھ پاک کی رپورٹ کے مطابق پاکستان میں گریفائٹ کے وسیع ذخائر موجود ہیں جن کی سرکاری طور پر کان کنی، پروسیسنگ اور مارکیٹنگ کی جائے تو عالمی منڈی میں بڑا حصہ حاصل کرنے میں مدد مل سکتی ہے۔ بہت سے ممالک گریفائٹ اور اس سے متعلقہ مصنوعات کی برآمد سے اپنی معیشتوں کو مضبوط کر رہے ہیں۔ چین، برازیل، ناروے، موزمبیق، مڈغاسکر، روس، یوکرین، کینیڈا، بھارت،   انگلینڈ اور اسپین بڑے برآمد کنندگان ملک ہیں۔  عالمی گریفائٹ مارکیٹ سال 2027 تک 21 ارب ڈالر ہو جائے گی۔ گلوبل مائننگ کمپنی میں پرنسپل جیولوجسٹ اور پاکستان منرل ڈیولپمنٹ کارپوریشن میں سابق جنرل منیجر ارضیات محمد یعقوب شاہ نے کہاکہ گریفائٹ کوئلے کی مختلف اقسام میں سے ایک ہے جو بنیادی طور پر میٹامورفک چٹانوں میں پایا جاتا ہے۔

مزید :

کامرس -