بلوچستان،بارشوں کے بعد سیلاب سے تباہی، مجموعی اموات 100 سے متجاوز

بلوچستان،بارشوں کے بعد سیلاب سے تباہی، مجموعی اموات 100 سے متجاوز

  

کوئٹہ (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) بلوچستان میں طوفانی بارشوں کے بعد سیلابی ریلوں نے تباہی مچادی، مختلف حادثات میں اموات 105 ہوگئیں۔بلوچستان کے مختلف علاقوں میں بارشوں سے سیلابی صورتحال کے بعدکئی رابطہ سڑکیں اور پل متاثر ہونے سے ٹریفک کی آمدورفت معطل ہوکر رہ گئی۔کراچی کوئٹہ قومی شاہراہ، بیلا، اوتھل، وندر، اور گڈانی کے مقام سے بہہ گئی ہے، چار پل بھی سیلاب کی نذر ہوگئے ہیں، سیلابی صورت حال کے باعث قومی شاہراہ پر کراچی، کوئٹہ، تربت گوادر اور دیگر شہروں میں مسافروں کی بڑی تعداد پھنسی ہوئی ہے تاہم  ٹریفک کی بحالی کے لیے ہنگامی اقدامات شروع کردئیے گئے ہیں۔ طوفانی بارشوں کے بعد سیلابی ریلوں سے کچھی، بولان، لسبیلہ، خضدار، آواران شدید متاثر ہوئے ہیں۔کراچی کو بلوچستان سے ملانے والی سڑک ریلے میں بہہ گئی، حب ندی پل کے نیچے پانی کی سطح کم نہ ہوسکی، سیلابی ریلے سیجھل مگسی کیضلعی ہیڈکوارٹرکا  زمینی راستہ  بھی منقطع ہوگیا، ڈیرہ بگٹی میں لاکھوں ایکڑ  پرکاشت کی گئی چاول کی فصل تباہ ہوگئی۔ترجمان بلوچستان حکومت فرح عظیم کے مطابق سیلاب سے ساڑھے چھ سو مکان تباہ ہوئے ہیں۔وزیراعلیٰ بلوچستان نے صوبیمیں ہائی الرٹ جاری کرنیکا حکم جاری کردیا ہے۔

بلوچستان سیلاب

مزید :

صفحہ آخر -