سیاسی غیر یقینی سے روپے کو نقصان پہنچا، فچ، آئی ایم ایف امداد سے پاکستانی کرنسی پر دباؤ کم ہو گا: بلو گ برگ

سیاسی غیر یقینی سے روپے کو نقصان پہنچا، فچ، آئی ایم ایف امداد سے پاکستانی ...

  

        کراچی،اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) عالمی ریٹنگ ایجنسی فِچ نے کہاہے سرمایہ آنے سے پاکستان کی کرنسی اور بانڈز پر دباؤ کم کرنے میں مدد مل سکتی ہے۔ فِچ کے مطا بق پاکستان کو آئی ایم ایف سے 1.2 بلین ڈالر حاصل کرنے کی توقع ہے۔ آئی ایم ایف کا قرضہ دوسرے ذرائع سے مزید فنانسنگ کے راستے کھول سکتا ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سیاسی غیر یقینی صورتحال کی وجہ سے اس ماہ پاکستان کی کرنسی اور بانڈز کو نقصان پہنچا ہے۔ فِچ کے ہانگ کانگ ڈائریکٹر کرس جانس کرسٹینز نے کہا ہے ہم پاکستان کے عملے کی سطح کے نئے معاہد ے کی آئی ایم ایف بورڈ کی منظوری کو قبول کرتے ہیں، یہ آئی ایم ایف اور دیگر کثیر جہتی اور دو طرفہ ذرائع سے اہم اضافی مالی امداد کے راستے بھی کھولے گا۔ دوسری جانببلوم برگ نے کہا ہے کہ پاکستان کو آئی ایم ایف سے ایک ارب 20کروڑ ڈالر ملنے کی امید ہے اور ان فنڈز سے پاکستانی کرنسی اور بانڈز پر دبا کم کرنے میں مدد ملے گی۔بلوم برگ رپورٹ میں بتایا گیا کہ آئی ایم ایف کے فنڈز آنے کے بعد پاکستان کو دیگر اداروں اور ممالک سے اضافی فنڈز ملنے کی راہیں کھلیں گی جبکہ مارکیٹ میں خاطر خواہ اعتماد آئے گا۔ رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا کہ رواں ماہ پاکستان کے بانڈز اور کرنسی پر ضرب آئی ہے جب کہ سیاسی غیریقینی صورتحال کی وجہ سے آئی ایم ایف کی طرف سے مدد میں تاخیر ہو رہی ہے جس سے سرمایہ کاروں میں بے چینی پائی جاتی ہے۔ پاکستان ڈیفالٹ کا خوف دور کرنے کیلئے آئی ایم ایف،چین،سعودی عرب سے فنڈز کی کوشش کر رہا ہے اور پاکستانی قوم اس خوف سے نکلنے کی کوشش کر رہی ہے۔

بلو م برگ،فِچ

مزید :

صفحہ اول -