حکومت بدلتے ہی تبادلوں کا ریلہ، ڈی جی اینٹی کرپشن، سی سی پی او لاہور، ڈی پی او جھنگ کو عہدوں سے ہٹادیا گیا

  حکومت بدلتے ہی تبادلوں کا ریلہ، ڈی جی اینٹی کرپشن، سی سی پی او لاہور، ڈی پی ...

  

         لاہور(جنرل رپورٹر، کرائم رپورٹر)پنجاب میں حکومت کی تبدیلی کے ساتھ ہی پولیس اور انتظامی افسرا ن کے تقرر و تبادلے شروع کر دئیے گئے،ایڈووکیٹ جنرل اور ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل پنجاب نے اپنے عہدوں سے استعفیٰ دیدیا،آنے والے دنوں میں پنجاب میں پولیس اور بیورو کریسی میں وسیع پیمانے پر اکھاڑ پچھاڑ کا امکان ہے۔ تفصیلات کے مطابق پرویزالٰہی کے وزیر اعلیٰ پنجاب بنتے ہی کیپٹل سٹی پولیس چیف بلال صدیق کمیانہ اورڈائریکٹر جنرل اینٹی کرپشن رانا عبد الجبار کو عہدوں سے ہٹا کر انٹیلی جنس بیورو جبکہ ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر جھنگ غیاث گل خان کو پنجاب سے تبدیل کر کے وفاق رپورٹ کرنے کے احکاما ت جاری کئے گئے ہیں۔وزیر اعلیٰ آفس کی ڈسپوزل پر موجود گریڈ 19کے افسر وسیم عباس کو تبدیل کرکے ڈائریکٹر (لینڈ ریکارڈ)بورڈ آف ریو نیو پنجاب تعینات کر دیا گیا۔رخصت پر گئے ہوئے ایڈیشنل سیکرٹری وزیر اعلیٰ آفس عامر کریم خان کو رخصت ختم ہونے پر محکمہ ایس اینڈ جی اے ڈی رپورٹ کرنے،ایڈیشنل سیکرٹریٹ (پروکیورمنٹ اینڈ ٹرانسپورٹ)ایس اینڈ جی اے ڈی ارشد محمود ارشد کو ایڈیشنل سیکرٹری وزیر اعلیٰ آفس،ڈپٹی سیکرٹری (سٹاف)ٹو چیف سیکرٹری وسیم احمد کی ڈپٹی کمشنر لیہ تعیناتی کے احکامات منسوخ کر کے ڈائریکٹر جنرل پارکس اینڈ ہارٹیکلچر اتھارٹی سرگودھا محمد یاسر کو ڈپٹی کمشنر لیہ تعینات کر دیاگیا۔سیکرٹری پنجاب اسمبلی محمد خان بھٹی کی پرنسپل سیکرٹری ٹو وزیر اعلیٰ پنجاب تعینات کئے جانے کے بعد پنجاب اسمبلی کے سینئر افسر عنایت اللہ لک کو سیکرٹری پنجاب اسمبلی تعینات کر دیا گیا۔مسلم لیگ (ن) کی حکومت ختم ہونے کے بعد ایڈووکیٹ جنرل اور ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل پنجاب نے اپنے عہدوں سے استعفیٰ دیدیا۔ ایڈووکیٹ جنرل پنجاب شہزاد شوکت اور ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل جواد یعقوب نے اپنے استعفے گورنر پنجاب محمد بلیغ الرحمان کو ارسال کئے ہیں۔ذرائع کے مطابق پنجاب میں بیورو کریسی اور پولیس میں وسیع پیمانے پر اکھاڑ پچھاڑ کی جائے گی جس کیلئے جلد فہرستیں مرتب کر لی جائیں گی۔

مزید :

صفحہ اول -