فوڈ اتھارٹی ٹیموں کا ملتان، خانیوال میں آپریشن، جرمانے

فوڈ اتھارٹی ٹیموں کا ملتان، خانیوال میں آپریشن، جرمانے

  

ملتان، خانیوال (سپیشل رپورٹر، نمائندہ پاکستان) پنجاب فوڈ اتھارٹی کی ڈائریکٹر آپریشنز ساتھ کی سربراہی میں شہراولیا میں غیر معیاری خوراک تیار کرنے والوں کیخلاف کارروائیاں کی گئیں۔  پروڈکشن ایریا میں گندگی، خوراک میں مردہ مکھیاں پائے جانے پر 2 بیکری مالکان کیخلاف ایف آئی آر درج کروادی گئیں۔ گزشتہ دی گئی ہدایات کے باوجود فوڈ بزنس مالکان کی جانب سے بہتری نہ لائی گئی۔ خوراک میں ایکسپائرڈ فلیورز اور کھلے اجزا کی ملاوٹ پر (بقیہ نمبر6صفحہ6پر)

2 فوڈ پروڈکشن یونٹس کو 30، 30  ہزار کے جرمانے کردیے گئے۔ملاوٹی دودھ فروخت کرنے پر 2 ملک شاپس کو بھاری جرمانے عائد کیے۔ کارروائیاں بہاولپور بائی پاس، پیپلز کالونی، خانیوال روڈ، دنیا پور روڈ پر کی گئیں۔ اس موقع پر ڈی جی پنجاب فوڈ اتھارٹی شعیب جدون کا کہنا تھا کہ خوراک کی تیاری میں کسی قسم کی کوتاہی برداشت نہیں ہے۔ معیاری خوراک عوام کا حق،عوامی شکایت پر ایڈیشنل ڈائریکٹر آپریشنز کی فوڈ سیفٹی ٹیم کے ہمراہ بڑی کارروائی،معروف بریانی اور زردہ پوائنٹ کی چیکنگ،ناقص انتظامات پر بھاری جرمانے عائد،بھاری مقدار میں غیر معیاری اشیاء تلف کر دی گئیں۔ کالونی نمبر 1 میں واقع معروف بریانی پوائنٹ کو کھلا رنگ اور فلیورز کا استعمال کرنے پر 50 ہزارروپے جرمانہ عائد کر دیا گیا۔املی کو گندی جگہ سٹور کرنے،فریزر میں خون کے لوتھڑے پائے گئے۔اس کے علاوہ ایوب روڈ پر واقع زردہ پلاؤ پوائنٹ کو پانی کی تجزیہ رپورٹ نہ ہونے پر 15 ہزارروپے جرمانہ عائد کر دیا گیا۔پروڈکشن ایریا میں حشرات کی بھرمار اور گندے فریزر میں خوراک سٹور کرنے پر جرمانہ کیا گیا۔اس موقع پر ڈی جی فوڈ اتھارٹی کا کہنا تھا کہ معیار بہتر نہ ہونے تک پنجاب فوڈ اتھارٹی ایسے ہی کارروائیاں جاری رکھے گی۔ان کا مزید کہنا تھا کہ غیر معیاری خوراک فروخت کرنے والوں کی نشاندہی کر کے پنجاب فوڈ اتھارٹی کا ساتھ دیں۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -