پشاور‘ معیاری طبی سہولتوں کی فراہمی کیلئے عطائیوں کیخلاف آپریشن کا آغاز

پشاور‘ معیاری طبی سہولتوں کی فراہمی کیلئے عطائیوں کیخلاف آپریشن کا آغاز

  

پشاور (سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخوا ہیلتھ کیئر کمیشن نے صحت کی معیاری خدمات کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لیے عطائیوں کے خلاف آپریشن کا آغاز کر دیا ہے۔ خیبرپختونخوا ہیلتھ کیئر کمیشن  نے5 معائنہ ٹیمیں تشکیل دی ہیں جن میں صوبے بھر کے زونل دفاتر کے12 فیلڈافسران شامل ہیں تاکہ عطائیوں کے خلاف گرینڈ آپریشن کیا جا سکے۔ان افسران نے 22 جولائی2022 کو ضلع پشاور میں 320 مراکز صحت کا تفصیلی معائنہ کیا۔ 14مراکز صحت کو صفائی کے ناقص انتظامات،مستند عملے کی غیرموجودگی،زائدالمعیاد ہونے والی کٹس ریجنٹس کی موجودگی اور کچرے کو ٹھکانے لگانے کا مناسب انتظام نہ ہونے کی وجہ سے سیل کیا گیا۔09 مراکز صحت کو شوکاز نوٹسز جاری کرنے کے ساتھ انسپکشن ٹیموں کی طرف سے مطلوبہ ہدایات جاری کی گئیں ہیں اور بتایا گیا کہ بغیرر جسٹریشن کلینک چلاناقانوناجرم ہے۔ خیبرپختونخوا ہیلتھ کیئر کمیشن کے قانون کے مطابق غیر رجسٹرڈ مراکز صحت عطا ئی مراکز ہیں اورعطائی مراکز کو سیل کیا جائے گا اور انہیں بھاری جرمانے کا سامنا بھی کرنا پڑے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -