پنجاب میں اگر گورنر راج لگا گیا تو انہیں عوام کا سامنا کرنا پڑے گا: خرم شیر زمان 

  پنجاب میں اگر گورنر راج لگا گیا تو انہیں عوام کا سامنا کرنا پڑے گا: خرم شیر ...

  

       کراچی(اسٹاف رپورٹر)پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور سندھ اسمبلی میں پارلیمانی لیڈرخرم شیر زمان نے کہا ہے کہ پنجاب میں اگر گورنر راج لگاگیا تو انہیں عوام کا سامنا کرنا پڑے گا۔ ایک زرداری صرف سندھ پر بھاری ہے۔سندھ میں لوگ ڈوب رہے تھے اور یہ شخص پنجاب میں سیاست کرتا رہا۔زرداری نے سندھ کے لوگوں کی زندگیوں کے لیے کچھ نہیں کیا۔بدھ کو کراچی میں میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے تحریک انصاف کے رہنما خرم شیر زمان نے کہاکہ ہم نے 2011 میں تحریک شروع کی تھی۔کراچی میں خوف تھا ہم تب بھی کھڑے ہوئے تھے۔ہم نے لوگوں کے لیے کام کرنا ہے۔ہم نے یہاں پر پیپلز پارٹی کو شکست دینی ہے۔انہوں نے کہا کہ آج ڈالر بڑھ گیا ہے۔ایکسپورٹ کم ہوگئی ہے۔اسٹاک مارکیٹ تباہ حالی کا شکار ہے۔ان کے کالے کرتوتوں کی وجہ سے پاکستان کا معیار نیچے آگیا ہے۔اس وقت معیشت تباہ حالی کا شکار ہے۔انہوں نے کہا کہ ایک زرداری صرف سندھ پر بھاری ہے، اب پنجاب سے بھی ان کا خاتمہ کردیا ہے۔انہوں نے کہا کہ سندھ میں دس سے بارہ روز بارشیں ہوئیں جس کے باعث سندھ کا برا حال ہو گیا۔بارشوں میں 90 لوگ جاں بحق ہوئے۔سندھ میں لوگ ڈوب رہے تھے اور یہ شخص پنجاب میں سیاست کرتا رہا۔زرداری نے سندھ کے لوگوں کی زندگیوں کے لیے کچھ نہیں کیا۔سندھ کے لوگوں کا پیسہ ضمیر فروشوں کو خریدنے میں لگ رہا ہے۔زرداری نے سندھ کے لوگوں کی زندگیوں کے لیے کچھ نہیں کیا۔سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں۔لوگوں کو پینے کا پانی نہیں مل رہا ہے،سندھ کی صورتحال پر اللہ رحم کرے۔ خرم شیر زمان نے کہا ہے کہ پنجاب میں ضمنی انتخاب پر لوگوں کو سلام پیش کرتا ہوں، پنجاب کے لوگوں نے خوف توڑا ہے، اب سندھ کے لوگوں نے خوف توڑنا ہے۔خرم شیر زمان نے کہا کہ گزشتہ دنوں کو ہونے والی بارش سے پانی بہت زیادہ کھڑا ہوا۔بارشیں کم ہوئی لیکن پانی زیادہ کھڑا ہوا ہے۔تحریک انصاف نے جو سڑکیں بنائی ہیں وہ آج بھی اپنی جگہ موجود ہیں۔انہوں نے کہا کہ بجلی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے لیکن ایم کیو ایم خاموش بیٹھی تماشہ دیکھ رہی ہے۔کے الیکٹرک کلیکشن ایجنٹ بنی ہوئی ہے۔ہم اس کی مذمت کرتے ہیں۔سڑکوں کی فوری مرمت کی جائیں۔کچی آبادیاں آج بھی پانی میں ڈوبی ہوئی ہیں،مرتضی وہاب شارع فیصل کے سات چکر کاٹتے ہیں اور کہتے ہیں کہ سب کچھ ٹھیک ہے۔پنجاب میں گورنر راج کے نفاذ کے حوالے سے پوچھے گئے ایک سوال میں جواب انہوں نے کہا کہ اگر پنجاب میں گورنر راج لگایا گیا تو انہیں عوام کا سامنا کرنا پڑے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -