شمالی وزیرستان متاثرین کا مطالبات منظوری کیلئے احتجاج جاری

شمالی وزیرستان متاثرین کا مطالبات منظوری کیلئے احتجاج جاری

  

پشاور(سٹی رپورٹر)شمالی وزیرستان مداخیل قبیلہ کے آئی ڈی پیز کا مطالبات کے حق میں پشاور پریس کلب کے سامنے دھرنا تیسرے روز بھی جاری رہا جس میں بڑی تعداد میں متاثرین نے شرکت کی دھرنے کی قیادت صدر رحمت اللہ سمیت دیگر متاثرین کر رہے تھے جنہوں نے بینرز آویزاں کئے تھے۔ اس موقع پر مظاہرین کا کہنا تھا کہ شمالی وزیرستان میں 2014 میں  دہشت گردی کیخلاف آپریشن کے باعث ہم اپنے علاقوں سے دوسرے علاقوں میں جانے پر مجبور ہوئے اور آئی ڈی پیز کی زندگی گزارتے رہے جبکہ حکومت کی جانب سے فی خاندان 20 ہزار روپے سم پر امداد ملتی تھی جو اب بند ہو چکی ہے اور مہنگائی کے اس دور میں ہمارا جینا مشکل ہو چکا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم نے متعدد بار متعلقہ حکام کو اپنے تحفظات سے آگاہ کیا اور دھرنے بھی دیئے لیکن کوئی شنوائی نہیں ہوئی۔انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ موبائل سم پر ملنے والی امداد بحال کی جائے اور افغانستان میں موجود آئی ڈی پیز کو فوری طور واپسی کیلئے اقدامات کئے جائیں بصورت دیگر احتجاجی دھرنا غیر معینہ مدت کیلئے جاری رہے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -