پنجاب میں صحت انصاف کارڈ، لنگر خانے، پناہ گاہیں دوبارہ سے شروع کرنے کا فیصلہ 

پنجاب میں صحت انصاف کارڈ، لنگر خانے، پناہ گاہیں دوبارہ سے شروع کرنے کا فیصلہ 

  

       اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں) وزیراعلیٰ پنجاب پرویز الٰہی نے کہا ہے کہ عمران خان نے کہا تو ایک منٹ نہیں لگاؤں گا پنجاب اسمبلی توڑ دوں گا۔تفصیلات کے مطابق پرویزالٰہی نے عمران خان سے بنی گالہ میں ملاقات کی،عمران خان نے پرویز الٰہی کو وزیراعلیٰ منتخب ہونے پر مبارکباد دی۔اس موقع پر پنجاب کی سیاسی اور انتظامی صورتحال پر گفتگو ہوئی جبکہ سپیکر پنجاب اسمبلی، ڈپٹی سپیکر اور پنجاب کابینہ سمیت اہم تقرریوں پر مشاورت ہوئی۔ملاقات کے دوران پی ٹی آئی رہنما سبطین خان کو سپیکر پنجاب اسمبلی بنانے کا فیصلہ بھی کیا گیا۔اس موقع پر چیئرمین پی ٹی آئی اور سابق وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ عوام کو ریلیف کے لیے کوئی کسر نہ اٹھا رکھی جائے، پنجاب کی عوام نے چوروں کے ٹولے کو مسترد کر دیا ہے۔

پرویز الٰہی 

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پنجاب میں پاکستان تحریک انصاف کی اتحادی حکومت واپس آنے کے بعد صوبے میں صحت انصاف کارڈ، لنگر خانے اور پناہ گاہیں دوبارہ سے شروع کرنے کا فیصلہ کر لیاگیاہے۔چیئرمین پاکستان تحریک انصاف اور سابق وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت پارٹی رہنماؤں کا اہم اجلاس ہوا، اجلاس کے دوران عمران خان نے قانونی ٹیم کو مبادکباد دی۔ذرائع کے مطابق عمران خان نے وزیراعلی پنجاب پرویز الٰہی سے ملاقات میں مشاورت پر پارٹی قیادت کو اعتماد میں لیا جبکہ سپیکر پنجاب اسمبلی کا عہدہ سبطین خان کو دیئے جانے کا حتمی فیصلہ کیا گیا،ذرائع کے مطابق پنجاب میں صحت انصاف کارڈ، لنگر خانے اور پناہ گاہیں دوبارہ سے شروع کرنے کا بھی فیصلہ کیاگیا، اور ڈپٹی سپیکر دوست محمد مزاری کیخلاف عدم اعتماد لانے کے حوالے سے بھی مشاورت کی گئی۔ذرائع کے مطابق اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ڈپٹی سپیکر کیخلاف فوری طور پر عدم اعتماد لائی جائیگی جبکہ عمران خان آج بروز جمعرات لاہور کا دورہ کریں گے، اس دورے کے دوران پی ٹی آئی چیئر مین صوبائی کابینہ کی بھی منظوری دیں گے۔

پی ٹی آئی 

مزید :

صفحہ اول -