جھوٹی پٹیشن دائر کرنے والے شہری کو 3لاکھ روپے جرمانہ 

 جھوٹی پٹیشن دائر کرنے والے شہری کو 3لاکھ روپے جرمانہ 
 جھوٹی پٹیشن دائر کرنے والے شہری کو 3لاکھ روپے جرمانہ 

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) لاہور ہائی کورٹ نے جھوٹی پٹیشن دائر کرنے والے شہری کو 3لاکھ روپے جرمانہ کر دیا۔ نجی ٹی وی چینل 24نیوز کے مطابق محمد رمضان نامی شہری کی طرف سے اپنے بیٹے محمد اسد کی بازیابی کے لیے لاہور ہائی کورٹ سے رجوع کیا گیا تھا۔ اس پٹیشن کی سماعت جسٹس ملک شہزاد احمد خان نے کی۔ 

پٹیشنر کی طرف سے اصغر علی اور یاسمین نامی خاتون کو ملزم نامزد کیا گیا تھا۔ مقدمے کی سماعت کے دوران معلوم ہوا کہ محمد رمضان نے اس کے علاوہ بھی ہائی کورٹ میں 22پٹیشنز دائر کر رکھی ہیں۔ ان میں سے ایک پٹیشن پہلے بھی محمد اسد کی بازیابی کے لیے دائر کی گئی تھی جو جھوٹی ثابت ہو چکی تھی۔ 

رپورٹ کے مطابق ڈی پی او جھنگ نے اس مقدمے کی انکوائری کرائی تھی جس کی رپورٹ میں پٹیشنر کی شادی اور بیٹے کے لاپتہ ہونے کے الزامات کو جھوٹ قرار دیا گیا تھا۔

جسٹس ملک شہزاد احمد خان نے شہری کی پٹیشن جھوٹی ثابت ہونے پر اسے 3لاکھ روپے جرمانہ کر دیا۔ 2010ء میں بھی اسی پٹیشنر کو لاہور ہائی کورٹ سے تین ہزار روپے جرمانہ کیا گیا تھا اور پولیس نے ہائی کورٹ کے حکم پر اس کے خلاف مقدمہ بھی درج کیا تھا۔ اس کے علاوہ ملزم کے خلاف 16کیسز بھی رجسٹرڈ ہیں۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -