بھارت کے ساتھ تمام دیرینہ تنازعات کو بات چیت کے ذریعے حل کرنا چاہتے ہیں : راجہ پرویز اشرف

بھارت کے ساتھ تمام دیرینہ تنازعات کو بات چیت کے ذریعے حل کرنا چاہتے ہیں : ...

  

اسلام آباد(ثناءنیوز+ این این آئی ) وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف نے کہا ہے کہ بھارت کے ساتھ تمام تصفیہ طلب امور کو پر امن ذرائع سے حل کرنا چاہتے ہیں ۔ قومی مسائل پر سیاسی مشاورت کے دائرے کو وسیع کرکے سب سے بات کریں گے۔سب آئین قانون کی بالا دستی پر متفق ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اسلام آباد میں وزیر خارجہ حناءربانی کھر، گورنر خیبر پختونخوا بیرسٹر مسعود کوثر نائب وزیر اعظم چودھری پرویز الٰہی و پاکستان مسلم لیگ(ق) کے صدر چودھری شجاعت حسین سے ملاقاتوں میں کیا۔ وزیر خارجہ سے ملاقات میں وزیر اعظم نے کہا کہ پاکستان تمام ممالک کے ساتھ قریبی تعلقات کا خواہاں ہے۔عالمی خطے میں پائیدار امن واستحکام میں پاکستان اہم کردار ادا کر رہا ہے۔وزیر اعظم نے کہا کہ پڑوسی ممالک میں ہم آہنگی کو فروغ ملنا چاہیے مسئلہ کشمیر سمیت بھارت کے ساتھ تمام تصفیہ طلب دیرینہ تنازعات کو بات چیت کے ذریعے حل کرنا چاہتے ہیں۔گورنر خیبرپختوانخواہ نے وزیراعظم سے ملاقات کی۔ وزیر اعظم نے کہا کہ قبائلی علاقوں کی ترقی حکومت کی ترجیحات میں شامل رہے گی۔ دہشت گردی اور انتہاءپسندی کے خلاف قبائلی عوام نے بے قربانیاں دی ہیں۔ گورنر خیبر پختونخوا نے وزیراعظم کو قبائلی علاقوں میں امن وامان کی صورتحال کے بارے میں آگاہ کیا وزیراعظم نے کہا کہ جمہوری حکومت فاٹا میں ترقیاتی عمل کو جاری رکھے گی۔ فنڈز میں اضافہ کیا جائےگا۔ چودھری پرویز الٰہی اور چوھری شجاعت حسین سے ملاقات میں وزیراعظم کے کہا کہ وہ اہم قومی مسائل پر تمام سیاسی جمہوریی قوتوں سے بات چیت اور مشاورت کو وسیع کرنا چاہتے ہیں۔ اتحادیوں سے بات چیت کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ حکومت اپنی اتحادی جماعتوں کے ساتھ مل کر درپیش چیلنجز سے عہدہ براہ ہونے کی کوشش کرے گی۔ انہوں نے گڈ گورننس کے ذریعے ہی عوام کو معیاری خدمات کی فراہمی کو یقینی بنایا جا سکتا ہے۔وزیر اعظم نے کہا کہ حکومت کافی حد تک لوڈ شیڈنگ پر قابو پا لے گی۔ مزید 2000 میگا واٹ بجلی سسٹم میں شامل کر لی گئی ہے۔ علاوہ ازیں صدر آزاد کشمیر سردار یعقوب خان نے بھی وزیراعظم ہاﺅس میں راجہ پرویز اشرف سے ملاقات کی۔ وزیر اعظم نے یقین دلایا کہ آزاد کشمیر سمیت ملک بھر میں لوڈ شیڈنگ میں جلد خاطر خواہ کمی ہو جائے گی ۔ وفاقی کابینہ نے اس مقصد کے لیے تھرمل پاور ہاوسز کو اضافی گیس اور فرنس آئل فراہم کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے ۔ جس کے نتیجے میں نیشنل گرڈ میں بارہ سے پندرہ سو میگا واٹ اضافی بجلی شامل کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت بجلی کے بحران پر مستقل قابو پانے کے لیے بھی جامع حکمت عملی کے تحت اقدامات کر رہی ہے ۔ دریں اثناءمولانا فضل الرحمن نے بھی راجہ پرویز اشرف کو ٹیلی فون کیا اور وزیراعظم کی ذمہ داری سنبھالنے پر مبارکباد دی اور درپیش چیلنجز کے حوالے سے خیر سگالی کے جذبات کا اظہارکیا۔

مزید :

صفحہ اول -