زائرین کی تعداد میں کمی سے کاروبار تباہ ہو گئے، دکاندار

زائرین کی تعداد میں کمی سے کاروبار تباہ ہو گئے، دکاندار

  

لاہور(نمائندہ خصوصی) دربار حضرت داتا صاحبؒ سے ملحقہ بازار کے دکانداروں نے دربار کی سخت سیکیورٹی پر شکوہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ بے جا سیکیورٹی اور سخت چیکنگ کے باعث زائرین نے دربار کے اندرجانا چھوڑ دیا ہے جس کے باعث ان کی دکانداری ختم ہو کے رہ گئی ہے۔ پھولوں، چادروں کے ایک دکاندار محمد نعیم نے ”پاکستان“ سے گفتگو کرتے ہوے کہا کہ بجلی گیس کی بندش سے پہلے ہی کاروبار نہیں تھے اور اوپر سے سخت سیکیورٹی نے رہی سہی کسر نکال دی ہے۔ زائرین سخت سیکیورٹی کے باعث اپنا وقت بچانے کیلئے باہر سے ہی دعا مانگ کر چلے جاتے ہیں جس سے ہماری چادریں، پھول نہیں بکتے۔ لنگر پکانے والے محمد ریاض باورچی نے کہا کہ ہمارے گھروں کے چولہے بجھ چکے ہیں۔ مہنگائی اتنی زیادہ ہے کوئی بھی ایک دیگ خریدنے کو تیار نہیں اور سیکیورٹی کے باعث زائرین اندر نہیں آسکتے جس کی وجہ سے لنگر کی پکوائی اور تقسیم میں پچاس فیصد سے زائد کمی ہو چکی ہے۔ان دکانداروں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ دربار کے اندر آنے والے راستوں کو رکاوٹیں ہٹا کر کھول دیا جائے اور دربار کی سیکیورٹی جتنی مرضی سخت کرلیں۔ بازاروں کے راستے کھلیں گے تو گاہک اندر آئے گا اور ہماری روزی روٹی چلے گی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -