ا نجینئر پر قاتلانہ حملے کیخلاف گیس ملازمین کی ہڑتال ، اجتجاجی مظاہرہ: وزیرااعلی وگورنر ہاﺅس کے گھیراﺅ کی دھمکی

ا نجینئر پر قاتلانہ حملے کیخلاف گیس ملازمین کی ہڑتال ، اجتجاجی مظاہرہ: ...

  

لاہور (خبر نگار) سوئی گیس کمپنی کے انجینئر محمد رشید کے گھر پر قاتلانہ حملے اور اس کے بیٹے کو شدید زخمی کرنے کے خلاف گیس کمپنی کے انجینئروں اور ملازمین نے گزشتہ روز دفاتروں میں مکمل طور پر ہڑتال اور ملازمین نے دفاتروں کی تالہ بندی کر کے زبردست احتجاج کیا لاہور سمیت پنجاب بھر میں ملازمین کی ہڑتال اور دفاتروں میں تالہ بندی کر کے زبردست احتجاجی مظاہرے اور ریلیاں نکالی گئیں اور گیس کمپنی کے انجینئر محمد رشید نے ملزمان کی گرفتاری تک ہڑتال اور احتجاج جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے لاہور میں سوئی گیس کمپنی کے انجینئرز ایسوسی ایشن کے مرکزی صدر سہیل ایم گلزار اور گیس ملازمین کے راہنماو¿ں کی قیادت میں ملازمین نے سوئی گیس کمپنی کے ریجنل آفس واقع گلبرگ میں دفاترز کی تالہ بندی کر دی اور انجینئروں اور ملازمین سے انجینئر محمد رشید پر قاتلانہ حملے کے خلاف بازو¿ں پر سیاہ پٹیاں باندھ کر زبردست مظاہرہ کیا اس موقع پر ملازمین نے گورو مانگٹ روڈ بلاک کر کے ٹائروں کو آگ لگائی جس سے ٹریفک کا نظام کئی گھنٹے تک متاثر رہا۔ اس موقع پر انجینئرز ایسوسی ایشن کے مرکزی صدر سہیل ایم گلزار نے کہا کہ احتجاج کا مقصد حکومت اور وزیر پٹرولیم سمیت ایم ڈی گیس کمپنی کو اپنے مسائل کو پوائنٹ آو¿ٹ کرنا ہے دفاتروں کی تالہ بندی مسئلہ کا حل نہیں۔ گیس چوری کے خلاف جاری کریک ڈاو¿ن میں کسی بھی صورت میں کمی یا رکاوٹ نہیں آئے گی اور گیس چوری کا خاتمہ کر کے دم لیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو گیس کمپنی کے انجینئر پر قاتلانہ حملے کرنے والے ملزمان کو فوری طور پر گرفتار کرنا ہوگا وگرنہ گیس کمپنی کے انجینئرز اور ملازمین احتجاج کا سلسلہ جاری رکھیں گے اس موقع پر انجینئرز ایسوسی ایشن کے مرکزی صدر اور جی ایم سہیل ایم گلزار نے ”پاکستان“ کو بتایا کہ گیس کمپنی کے انجینئروں پر قاتلانہ حملے کرنے سے گیس چوروں کے خلاف آپریشن نہیں رک سکے گا اور گیس کمپنی کے انجینئروں پر حملے کر کے ان کے حوصلوں کو پست نہیں کیا جا سکتا اس موقع پر سوئی گیس کمپنی ایمپلائز یونین کے راہنماو¿ں معین الحق علوی، شہزادہ اقبال رضا اور مقبول احمد بھٹی سمیت زبیر احمد خان اور اسلام الحق نے کہا کہ حکومت نے 24 گھنٹوں کے اندر ذمہ داروں کو گرفتار نہ کیا تو وزیراعلیٰ ہاو¿س اور گورنر ہاو¿س کا گھیراو¿ کیا جائے گا دوسری جانب گیس کمپنی کے انجینئر محمد رشید پر قاتلانہ حملے کے خلاف سوئی گیس کمپنی ے ہیڈ آفس واقع ایجرٹن روڈ اور سب آفس ہربنس پورہ، ڈیفنس آفس سمیت ملتان روڈ اور شاہدرہ آفس میں سب ملازمین نے گیس کمپنی کے دفاتروں کی تالہ بندی کر کے زبردست احتجاجی مظاہرے اور ریلیاں نکالیں اس موقع پر سوئی گیس کمپنی کے دفاتروں میں آنے والے سائلین کو شدید دشواری کا سامنا کرنا پڑا دریں اثناءسوئی گیس کمپنی کے انجینئر محمد ارشد پر قاتلانہ حملے اور ملزمان کی عدم گرفتاری پر وزیر اعظم راجہ پرویزاشرف نے نوٹس لے لیا ہے اور چیف سیکرٹری پنجاب اور آئی جی پولیس پنجاب سے جواب طلب کر لیا ہے جس پر آئی جی پولیس پنجاب نے ایس پی کینٹ معروف صفدر واہلہ کو کارروائی کر کے دو دن کے اندر رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیاہے۔ جبکہ اس حوالے سے سوئی گیس کمپنی کے انجینیئر جہانزیب خاں نے کہا ہے کہ سپروائزر محمد ارشد کے گھر پر قاتلانہ حملے کے خلاف تھانہ ہربنس پورہ میں باقاعدہ درخواست دے دی گئی ہے۔ جبکہ اس حوالے سے ایس ایچ او ہربنس پورہ رانا تاثیر احمد نے بتایا کہ کارروائی جاری ہے اور ملزمان کو جلد گرفتار کر لیا جائے گا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -