پنجاب حکومت کے ترقیاتی کام لاہور کی گراﺅنڈز کے دشمن بن گئے

پنجاب حکومت کے ترقیاتی کام لاہور کی گراﺅنڈز کے دشمن بن گئے

  

لاہور(سپورٹس رپورٹر) ایک طرف تو پنجاب حکومت کھیلوں کے میدانوں کو آباد کرنے کی بات کرتی ہے تو دوسری طرف شہر میں جاری ترقیاتی کاموں کی وجہ سے اس نے گراﺅنڈ ز میںتعمیرانی سامان رکھ دیا ہے جس سے کھیل کے میدان ویران ہوگئے ہیں اور یہاں پر کھیلنے کےلئے آنے والے کھلاڑیوں کو تو نقصان ہو ہی رہا ہے لیکن ا س کے ساتھ ساتھ یہاں پر بچھی ہوئی گھاس بھی خراب ہوچکی ہے پنجاب حکومت کا ترقی پروگرام لاہور کی گر اﺅنڈ ز کا دشمن بن گیا ہے اور یہاں پر کھیلوں کی سرگرمیاں معطل ہوکر رہ گئیں ہیں جس سے کھلاڑی شدید پریشانی کا شکار ہیں ان گراﺅنڈز میں گورنمنٹ کالج، بے بی اولڈ کیمپس گراﺅنڈز شامل ہیں جہاں پر روزانہ بڑی تعداد میں لوگ کھیلنے کے لئے آتے تھے اور کئی کھیلوں کے یہاں پر باقاعدگی سے تربیتی کمیپس بھی لگتے تھے ان گراﺅنڈز میں بس ریپڈٹرانزٹ سسٹم کے لئے دیوار توڑ کر تعمیراتی سامان رکھ دیا گیا ہے یہ ترقیاتی کام کم از کم اگلے پانچ ماہ تک مکمل نہیں ہوں گے اور اس وقت تک سامان گراﺅنڈز میں پڑا رہے گا جس سے کھیل اور کھلاڑیوں کا جو نقصان ہوگا اس کا ازالہ کون کرے گا یہ ایک سوالیہ نشان ہے جس کا جواب دینا پنجاب حکومت کےلئے بھی مشکل ہے حکومت نے شہر میں ایک طرف تو سو سے زائدہ گراﺅنڈز کی تعمیر کا وعدہ کیا ہے لیکن اس وقت جو گراﺅنڈز ہیں ان کے ساتھ جو سلوک کیا جارہا ہے اس کو دیکھتے ہوئے یہ کہنا مشکل ہے کہ حکومت وہ وعد ہ پورا کرسکے گی لاہور شہرکے مختلف کرکٹ کلبز سے وابستہ افراد نے اظہار افسوس کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ کھیل دشمن پالیسی ہے تعمیراتی کا م اچھی بات ہے لیکن اس کے لئے ہونا یہ چاہئیے تھا کہ ان گراﺅنڈز کو برباد نہ کیا جاتا بلکہ اس کےلئے کوئی اور جگہ منتخب کی جاتی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -