اعظم کلاتھ مارکیٹ خستہ حالی کا شکار بجلی کے لٹکتے جال ، پارکنگ سہولت کا فقدان ، تاجروں کو شدید مشکلات کا سامنا

اعظم کلاتھ مارکیٹ خستہ حالی کا شکار بجلی کے لٹکتے جال ، پارکنگ سہولت کا فقدان ...

  

لاہور(رپورٹ اسد اقبال تصاویر ندیم احمد) صوبائی دارالحکومت میں واقع ایشیا کی سب سے بڑی تھوک اعظم کلاتھ مارکیٹ ضلعی حکومت کی عدم توجہی کے باعث مسائل سے دوچار ہے جاں پر بے ہنگم بجلی کی ننگی تاروں کے جال اور پارکنگ کے لئے جگہ نہ ہونے کے باعث تاروں کے جال اور پاکنگ کے لئے جگہ نہ ہونے کے باعث تاجر مشکلات سے دوچار ہیں جبکہ ملک میں جاری توانئای بحران نے اعظم کلاتھ مارکیٹ میں 60فیصد کاروبار کو گرہن لگا دیا ہے ضلعی حکومت کو چاہئے کہ بین الاقوامی سطح کی حامل مارکیٹ میں مسائل کے خاتمہ کے لئے سنجیدگی کا مظاہرہ کریں پاکستان رپورٹ کے مطابق صوبائی دارالحکومت کے اندرون شہر میں اقع اعظم کلاتھ مارکیٹ میں ہزاروں دکانیں واقع ہیں اعظم کلاتھ مارکیٹ میں 19بلاک چار حصوں پر مشتمل ہیں، جن میں پاک کلاتھ سنڈیکیٹ، نواب بازار، پنجاب بلاک، سربلند بلاک، پاکستان کلاتھ، اکبر بلاک، کوئٹہ بلاک، مسلم بلاک ، حسین بلاک، کشمیر بلاک، بسم اللہ بلاک اور ابوبکر بلاک سمیت دیگر بلاک شامل ہیں جس پر ایک بورڈ تشکیل دیا گیا ہے جو مارکیٹ کے تمام بلاکس کو کنٹرول اور مانیٹر کرتا ہے۔ اعظم کلاتھ مارکیٹ میں تنگ و تاریک گلیاں چاروں اطراف لٹکتے کپڑے اور تاجروں کا مال دکانوں کے آگے پڑے ہونے سے خریداروں کا پیدل چلنا بھی دشوار ہے جبکہ لٹکتی بجلی کی ننگی تاریں ہر وقت تاجروں کی جان سولی پر لٹکائی ہوئی ہے ماضی میں شارٹ سرکٹ کے باعث آگ بھڑک اٹھنے سے تاجروں کا کروڑوں روپے کا مال جل کر خاکستر ہو چکا ہے تاہم ضلعی حکومت کی جانب سے ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لئے کوئی اقدامات نہ کئے۔ اعظم کلاتھ مارکیٹ میں جگہ کی کمی کے باعث تاجروں نے دکانوں میں بیسمنٹ اور کئی کئی منزلیں کھڑی کر رکھی ہیں جس کے باوجود اعظم کلاتھ مارکی میں جگہ کی کبھیدکھائی نہیں ہے ضلعی حکومت کو چاہئے کہ اہمیت کی حامل اعظم کلاتھ مارکیٹ میں مسائل کے خاتمہ کے لئے اقدامات اٹھائیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -