کرپشن الزامات7تھانیدار ملازمت سے برطرف، متعدد کو منشور کی سزائیں

کرپشن الزامات7تھانیدار ملازمت سے برطرف، متعدد کو منشور کی سزائیں

  

لاہور(کر ا ئم ر پو ر ٹر)ڈی آئی جی آپریشنز محمد طاہر رائے نے آج آرڈلی روم میں انسپکٹر سے لے کر کانسٹیبل رینک تک کے73پولیس اہلکاروں کو دیئے جانے والے شوکاز نوٹسز کے جوابات کو سنااور ان میں سے انسپکٹرسمیت7تھانیداروں، ایک ہےڈ کانسٹیبل اورایک کانسٹیبل کو کرپشن، نااہلی،مال مقدمہ میں خرد برد اور بددیانتی پر ملازمت سے برطرف ،جرمانوں اور سنشور کی سزائیں دی ہیں جبکہ دیگر پولیس اہلکاروں کے جوابات سن کر ان کے شو کاز نوٹسز کو داخل دفتر کرنے کاحکم دیا۔تفصیلات کے مطابق ڈی آئی جی آپریشنز نے T/ASI وقار افضل کو چار شہریوں ارشد، نواز،عثماناور ارشد علی کو ناجائز طور پر ڈکیتی کے شبہ میں حراست میں لے اپنی پرائیویٹ جگہ پر رکھ کر تفتیش اور تشدد کرنے اور بعد میں ڈیل کر انہیں چھوڑنے پر ملازمت سے برطرفی کی سزا دی ہے۔اسی طرح انسپکٹرخالد محمود، سب انسپکٹر افتخار احمد،سب انسپکٹر اشتےاق احمد، سب انسپکٹر رفےع اللہ، سب انسپکٹر محمد اسلم، سب انسپکٹر محمد آصف، ہےڈ کانسٹیبل ثمر عباس اور کانسٹیبل طارق اقبال کو فرائض سے غفلت ،اختیارات سے تجاوز، کرپشن، اندراج مقدمہ میں بلا جواز ٹال مٹول اورمال مقدمہ جمع کروانے مےں تاخےر،جرائم کو کنٹرول کرنے میں ناکامی اور شہریوں کوغےر قانونی طور پر حراست مےں رکھنے پر سنشوراور جرمانے کی سزائیں دی ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -