ہائیکورٹ نے قتل کے الزام میں ملوث سابق کمشنر لاہور کے بیٹے شان کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں شامل کرنے کیلئے درخواست نمٹا دی

ہائیکورٹ نے قتل کے الزام میں ملوث سابق کمشنر لاہور کے بیٹے شان کا نام ایگزٹ ...

  

 لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکور ٹ کے مسٹر جسٹس خالد محمود خان نے قتل کے الزام میں ملوث سابق کمشنر لاہور کے بیٹے شان کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں شامل کرنے کے لئے دائر درخواست نمٹا دی ہے ۔جبکہ خسرو پرویز کو او ایس ڈی بنانے کی استدعا مستر د کرتے ہوئے درخواست گزار کو الگ سے درخواست دائر کرنے کی ہدایت کی ہے ۔گزشتہ روز پولیس حکام کی جانب سے عدالت کو بتایا گیا تھا کہ ملزم کو گرفتار کر کے ماتحت عدالت کے روبروپیش کر دیا گیا ہے ۔ جبکہ سرکاری وکیل کا موقف تھا کہ شان کانام ای سی ایل میں ڈالنے کے لیے کارروائی شروع کر دی گئی ہے۔مقتول کے وکیل نے عدالت سے استدعا کی خسرو پرویز اس وقت ایک اعلی سرکار ی افسر ہیں جو کیس پر اثر انداز ہونے کی کوشش کر رہے ہیں ۔لہذا عدالت انھیں او ایس ڈی بنائے ۔جس پر عدالت نے درخواست گزار کو ہدایت کی کہ اس حوالے سے علیحدہ سے درخواست دائر کی جائے۔درخواست گزار فضل الہی کی جانب سے دائر درخواست میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ سابق کمشنر لاہوراور بیورو کریٹ خسرو پرویز کے بیٹے شان نے اسکے بیٹے حمزہ الہی کو قتل کر دیا تھا ۔جس پر عدالت کی طرف سے اسکی درخواست ضمانت بھی خارج ہوگئی ہے ۔کیونکہ وہ ایک بااثر باپ کا بیٹا ہے چنانچہ خدشہ ہے کہ وہ ملک سے فرار ہو جائے گا لہذا اسکا نام ای سی ایل میں شامل کیا جائے۔

مزید :

صفحہ آخر -