منور حسن کا اراکان میں قتل عام کیخلاف جمعہ کو یوم احتجاج منانے کا اعلان

منور حسن کا اراکان میں قتل عام کیخلاف جمعہ کو یوم احتجاج منانے کا اعلان

  

لاہور(نمائندہ خصوصی) امیر جماعت اسلامی پاکستان سید منور حسن نے پاکستانی عوام سے اپیل کی ہے کہ جمعہ29 جون کو ملک بھر میں اراکان میں مسلمانوں کے قتل عام کے خلاف یوم احتجاج منائیں، منصورہ سے جاری بیان میں سید منور حسن نے کہا ہے کہ ارکان، میانمار (برما) کے لاکھوں مسلمانوں کو مسلمان ہونے کی سزا دی جا رہی ہے، گزشتہ چند ہفتوں میں ہزاروں مسلمان تہ تیغ کر دئیے گئے لیکن عالمی برادری اور عالمی ادارے اس وحشیانہ قتل عام اور بہیمانہ مسلم کشی کے خلاف کوئی آواز بلند نہیں کر رہے اور مجرمانہ خاموشی اختیار کر رکھی ہے، سید منور حسن نے اس امر پر افسوس کا اظہار کیا ہے کہ حکومت پاکستان کی طرف سے بھی اراکانی مسلمانوں کے حق میں کوئی احتجاج نہیں کیا گیا، انہوں نے کہا کہ سالہا سال سے مسلمانوں پر مظالم ڈھائے جا رہے ہیں لیکن ان مظالم پر پوری دنیا نے چپ سادھ رکھی ہے۔ امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ عالمی ذرائع ابلاغ نے بھی اراکانی مسلمانوں پر ٹوٹنے والی قیامت سے آنکھیں بند کر رکھی ہیں، سید منور حسن نے او آئی سی کے سیکرٹری جنرل اکمل الدین احسان او غلو اور اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ فوری طور پر اراکانی مسلمانوں کی امداد کے لیے ضروری اقدامات کرے، امیر جماعت اسلامی نے حکومت پاکستان اور پاکستانی عوام سے بھی مطالبہ کیا کہ وہ اپنے مصیبت زدہ اراکانی بھائیوں کی امداد کرنے اور ان پر توڑے جانے والے مظالم کو رکوانے میں اپنا کردار ادا کریں۔جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے حزب المجاہدین کے نائب امیر مولانا جاوید قصوری اور دیگر وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ اپر دیر میں فوجیوں اور سیکیورٹی فورسز کے جوانوں کی شہادتوں اور ظالمانہ قتل کا ذمہ دار امریکہ اور نیٹو فورسز ہیں، سلالہ پوسٹ پر حملے کے بعد اپر دیر کے واقعہ نے امریکی چہرے اور عزائم کو بے نقاب کر دیا ہے اور امریکہ گےکے گھناﺅنے عزائم کی کھلی نشاندہی کر دی ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -