پاکستانی اور انڈونیشیاکے ترجیحی معاہدے پر عمل یکم جولائی سے ہوگا

پاکستانی اور انڈونیشیاکے ترجیحی معاہدے پر عمل یکم جولائی سے ہوگا

  

کراچی (اکنامک رپورٹر) پاکستان اور انڈونیشیا کے درمیان ترجیحی تجارت کے معاہدے پر عمل درآمد یکم جولائی سے شروع ہوجائے گا، کراچی میں انڈونیشین قونصل جنرل روسالیس رسمین نے کہا ہے کہ پاکستان اور انڈونیشیا کے درمیان تجارت کے وسیع مواقع ہیں، دونوں ملکوں کے درمیان ترجیحی تجارت کا معاہدہ یکم جولائی سے فعال ہو جائے گا، اس سلسلے میں انڈونیشیا کے وزیر تجارت آئندہ ماہ پاکستانی ہم منصب سے ملاقات میں معاہدے کے حتمی نفاذ کا جائزہ لیں گے۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان اور انڈونیشیا کے درمیان رواں سال فروی میں معاہدے پر دستخط کئے گئے تھے، جس کے تحت انڈونیشیا نے پاکستان کے لئے دو سو سولہ اشیا میں خصوصی رعایت کا اعلان کیا تھا، جبکہ پاکستان نے انڈونیشیا کے لئے دو سو ستاسی ٹیرف لائنز میں رعایتیں دیں، ان کا کہنا تھا کہ ترجیحی تجارت کے معاہدے کے بعد دونوں ملکوں کے درمیان تجارت کا حجم چند برسوں میں دو ارب ڈالر تک پہنچ جائے گا، جو اس وقت صرف اسی کروڑ ڈالر سالانہ ہے۔

مزید :

کامرس -