حریت رہنماﺅں نے دستگیر صاحبؒ کے مزار میں آتشزدگی کی تحقیقات کے لیے بنائی گئی کمیٹی مسترد کر دی

حریت رہنماﺅں نے دستگیر صاحبؒ کے مزار میں آتشزدگی کی تحقیقات کے لیے بنائی ...

  

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیر میں حریت رہنماﺅں اور علمائے دین نے قابض انتطامیہ کی طرف سے دستگیر صاحب ؒ کے تاریخی مزار میں ہونے والی آتشزدگی کی تحقیقات کے اعلان کو مستردکر دیا ہے۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق نے جو متحدہ مجلس علماءکے بھی سربراہ ہیں سرینگر میں ایک بیان میں کہا کہ تحقیقات کو مسترد کر تے ہوئے کہا کہ ماضی کا تحربہ یہ بتاتا ہے کہ قابض انتظامیہ کی طرف سے بنائی جانے والی اس طرح کی تحقیقاتی کمیٹیوں کی رپورٹ کبھی بھی منظر عام پر نہیں آتی اور اگر آئے بھی تو یہ جانبدارنہ ہوتی ہے۔ انہوںنے آتشزدگی کی غیر جانبدارانہ تحقیقات کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ متحدہ مجلس علمااس بات کی خواہاں ہے کہ سانحہ خانقاہ دستگیر صاحب کے سجادہ نشین کی سربراہی میں اچھی شہرت کے حامل افرد پر مشتمل تحقیقاتی کمیٹی بنائی جائے۔انہوں نے کمیٹی میں سول سوسائٹی اورمذہبی جماعتوںکے ممبروں کو بھی شامل کرنے کا مطالبہ کیا۔ بزرگ کشمیری حریت رہنما سید علی گیلانی نے ایک بیان میں انہیں قابض انتظامیہ کے اعلان کردہ تحقیقاتی عمل پر اعتماد نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ قابض انتظامیہ اس طرح کی کمیٹیوںکی تشکیل عالمی برادری کی آنکھوںمیں دھول جھونکنے کے لیے کرتی ہے۔ اہل سنت والجماعت کے چیئرمین محمد اشرف اندرابی نے سرینگر میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب میں کہا کہ خانقاہ میں پراسرار آتشزدگی کی کسی اچھی ساکھ والی شخصیت سے تحقیقات کرائی جائے۔ انہو ں نے کہا کہ سانحہ چرار شریف کی تحقیقات کی رپورٹ کئی برس گزرنے کے باوجود تاحال منظر عام پر نہیں آئی۔ محمد اشرف اندرابی نے کہا کہ قابض انتظامیہ نے کشمیر کے تہذیبی اور ثقافتی ورثے کو تباہ کرنے کی ایک مکروہ سازش شروع کر رکھی ہے۔ دارلعلوم رحمت آباد کے محمد شفیع اندرابی نے کہا کہ دستگیر صاحبؒ کے مزار میں آتشزدگی کشمیریوں کے لیے غم و اندوہ کا باعث ہے۔ دریں اثناءمقبوضہ کشمیر کے مفتی اعظم کشمیر مفتی بشیر الدین نے جمعہ کو خانیار چلو کی کال دی ہے۔ واضح رہے کہ کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے آتشزدگی کے واقعے کی تحقیقات کے لیے ڈویژنل کمشنر کشمیر کی سربراہی میںکمیٹی تشکیل دیتے ہوئے اسے ایک ہفتے کے اندر اپنی رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی ہے۔

مزید :

عالمی منظر -