سرینگر کے علاقے خانیار میں حریت رہنماﺅں پر حملے کی مذمت

سرینگر کے علاقے خانیار میں حریت رہنماﺅں پر حملے کی مذمت

  

سرینگر (اے پی پی) سرینگر کے علاقے خانیار میں تحریک آزادی کے دشمن عناصر کی طرف سے حریت رہنماﺅں شبیر احمد شاہ، نعیم احمد خان اور جاوید احمد میر پر حملے کی شدید مذمت کی گئی ۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق بزرگ کشمیری حریت رہنما سید علی گیلانی نے ایک بیان میں کہا کہ حریت رہنماﺅں پر حملہ تحریک آزادی پر حملے کے مترادف ہے۔ جموں و کشمیر محاذ آزادی کے سرپرست محمد اعظم انقلابی نے حملے کو ایک سنگین جرم قرار دیتے ہوئے کہا کہ جس طرح سے شبیر احمد شاہ، نعیم احمد خان اور جاوید احمد میر پر حملہ کیا گیا اس سے واضح ہو جاتا ہے کہ بھارتی حکومت نہیں چاہتی کہ کشمیریوں کی تحریک آزادی پر امن رہے۔ مسلم خواتین مرکز کی چیئرپر سن یاسمین راجہ نے کہا کہ واقعے میں تحریک آزادی دشمن عناصر کا ہاتھ ہے جو بہت جلد بے نقاب ہونگے۔ جموں و کشمیر پیپلز لیگ کے رہنما مختار احمد وازہ نے ایک بیان میں کہا کہ حریت رہنماﺅں پر حملہ تمام کشمیریوں پر حملہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ شبیر احمد شاہ اور حریت رہنماﺅں پر ایک منظم سازش کے تحت حملہ کیاگیا۔ جموں و کشمیر سالویشن موومنٹ کے چیئرمین ظفر اکبر بٹ نے ایک بیان میں حملے کی مذمت کرتے ہوئے اسے بھارتی ایجنسیوں کی سازش قرار دیا۔ تنظیم کے نائب صدر طفیل الطاف بٹ نے بھی واقعے کی بھر پور مذمت کی ہے۔ کل جماعتی حریت کانفرنس آزاد کشمیر شاخ کے کنوینر محمود احمد ساغر نے بھی حریت رہنماﺅں پر حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے کشمیریوں کے خلاف ایک بڑی سازش قرار دیا۔

مزید :

عالمی منظر -