مسلم لیگ ن کو نشان الاٹ نہ کیا جائے : عوامی تحریک ، انتخابات کا عمل چلنے دیں : الیکشن کمیشن

مسلم لیگ ن کو نشان الاٹ نہ کیا جائے : عوامی تحریک ، انتخابات کا عمل چلنے دیں : ...

اسلام آ با د (آئی این پی)الیکشن کمیشن نے مسلم لیگ ن سے نواز کا نام ہٹانے سے متعلق کیس کی سماعت 9جولائی تک ملتوی کر دی ، سماعت کے دوران درخواست گزار خرم نواز گنڈاپور نے استدعا کی کہ مسلم لیگ ن سے نواز کا نام ہٹایا جائے کیونکہ نواز شریف کے نام پر ووٹ مانگے جارہے ہیں اور وہ نا اہل ہوچکے ہیں جبکہ کیس کی سماعت جلد مکمل کی جائے۔ الیکشن کمیشن میں مسلم لیگ ن کے نام سے نواز کا نام ہٹانے سے متعلق کیس کی سماعت ممبر سندھ عبدالغفار سومرو کی سربراہی میں تین رکنی کمیشن کی سماعت کی ۔ درخواست گزار پاکستان عوامی تحریک کے خرم گنڈاپور، مخدوم نیاز انقلابی اور رئیس عبدالواحد کمیشن کے سامنے پیش ہوئے۔خرم نواز گنڈاپور نے کمیشن کو بتایا کہ الیکشن سر پر ہیں مسلم لیگ ن والے نواز شریف کے نام سے ووٹ مانگ رہے ہیں۔ انہیں روکا جائے۔ خرم نواز گنڈاپور نے استدعا کی کہ مسلم لیگ ن سے نواز کا نام ہٹایا جائے۔ کیس کی جلد سے جلد سماعت مکمل کی جائے۔ کمیشن نے ہدایت کی کہ آئندہ سماعت 9جولائی کو کریں گے۔ خرم نواز گنڈا پور نے کہا کہ اس وقت تک بیلٹ پیپر پرنٹ ہو چکے ہو ں گے۔ ممبر بلوچستان شکیل بلوچ نے ریمارکس دئیے کہ بیلٹ پیپر پر پارٹی کا نام نہیں بلکہ انتخابی نشان اور امیدوار کا نام درج ہوتا ہے۔ ممبر پنجاب الطاف ابراہیم قریشی نے استفسار کیا کہ کوئی کہہ رہا ہے کہ وہ ہمارے لیڈر ہیں تو انہیں روکا جا سکتا ہے ؟۔ خرم نواز گنڈاپور نے استدعا کی کہ چاہتے ہیں کہ مسلم لیگ ن کو انتخابی نشان الاٹ نہ کیا جائے ۔ ممبر پنجاب الطاف ابراہیم قریشی نے ریمارکس دئیے کہ کیا آپ چاہتے ہیں انتخابات کا عمل روک دیا جائے۔ اسے چلنے دیں، مخدوم نیازانقلابی نے بتایا کہ نواز شریف کا نام پارٹی صدارت سے تو ہٹا دیا گیا ہے تاہم پارٹی کے ساتھ نام منسلک ہے۔ الیکشن کمیشن نے 9 جولائی تک سماعت ملتوی کر دی۔دوسری جانب الیکشن کمیشن نے انتخابات تک چولستان میں سرکاری اراضی کی الاٹمنٹ روکنے کا حکم دے دیا۔ الیکشن کمیشن میں چولستان میں سرکاری اراضی من پسند افراد کو الاٹ کرنے کے خلاف درخواست کی سماعت ممبر سندھ عبدالغفار سومرو کی سربراہی میں تین رکنی کمیشن نے کی ،وکیل درخواست گزار نے کمیشن کو بتایا کہ چولستان کا 60 لاکھ ایکڑ رقبہ ہے2ہزار لوگوں کی سکروٹنی 2015 تک مکمل کی گئی ،من پسند شخصیت کو ایم ڈی چولستان ڈویلپمنٹ اتھارٹی مقرر کیا گیا۔جعلی نمبر داریاں لگا کر دو لاکھ ایکڑ سرکاری اراضی الاٹ کی گئی،حکومت نے 1500لوگوں کو اراضی الاٹ کی ہے،وکیل چولستان ڈویلپمنٹ اتھارٹی نے کمیشن کو بتایا کہ سرکار نے 22ہزار درخواستوں میں سے 15ہزار کو سکروٹنی کے بعد فائنل کیا،اب تک 3759کی بیلٹنگ ہوئی ہے،حکومت نے اب تک کوئی الاٹمنٹ نہیں کی،ایم ڈی چولستان ڈویلپمنٹ اتھارٹی نے کمیشن کو بتایا کہ میرا تقرر 8ماہ پہلے ہوا ہے،الیکشن کمیشن نے استفسار کیا کہ معاملہ 2013سے چل رہا ہے ایم ڈی کا تقرر الیکشن کے قریب کیوں ہوا، الیکشن کمیشن نے انتخابات تک چولستان میں سرکاری اراضی کی الاٹمنٹ روکنے کا حکم دے دیا، کمیشن نے درخواست گزار کو ہدایت کی کہ ان کے پاس الاٹمنٹ کے ثبوت ہیں تو متعلقہ فورم پر جائے۔علاوہ ازیں الیکشن کمیشن نے محکمہ زراعت کے افسران کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنانے کے معاملہ پر سیکرٹری زراعت کو انکوائری مکمل کر کے2 جولائی کو پیش ہونے کا حکم دیا ۔ الیکشن کمیشن میں ممبر سندھ عبدالغفار سومرو کی سربراہی میں تین رکنی کمیشن کی سماعت ہوئی ۔ درخواست گزار غلام حسین اور محکمہ زراعت کی جانب سے وکیل الیکشن کمیشن میں پیش ہوئے۔درخواست گزار نے عدالت کو بتایا کہ میں نے بہاولپور میں بلدیاتی انتخابات کے دوران ریٹرننگ افسر کے فرائض انجام دئیے جس کے باعث گزشتہ14 ماہ سے معطل ہوں۔ ممبر سندھ نے استفسار کیا کہ آپ کون سے گریڈ میں ہیں اور کس وزیر نے آپ کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا۔ درخواست گزار نے کمشن کو بتایا کہ میں زراعت کے محکمہ میں ڈائریکٹر اور19 گریڈ کا افسر ہوں۔ حلقے سے منتخب اور صوبائی وزیر ملک اقبال نے مجھے سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا۔ بلدیاتی انتخابات2015-16میں ریٹرننگ افسر تھا اور حلقے میں دوبارہ ووٹوں کی گنتی بھی کرائی۔ میری درخواست ہے کہ مجھے محکمے میں دوبارہ بحال کیا جائے۔ الیکشن کمیشن نے سیکرٹری زراعت کو طلبی کا نوٹس جاری کر تے ہوئے سیکرٹری زراعت کو انکوائری مکمل کر کے2جولائی کو پیش ہونے کا حکم دیا ، الیکشن کمیشن نے سماعت 2جولائی تک ملتوی کر دی۔

الیکشن کمیشن

مزید : علاقائی