پنجاب سول سیکرٹریٹ اور دیگرسرکاری اداروں کے ملازمین کی تنخواہوں میں فرق

پنجاب سول سیکرٹریٹ اور دیگرسرکاری اداروں کے ملازمین کی تنخواہوں میں فرق

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے پنجاب سول سیکرٹریٹ اور دیگرسرکاری اداروں کے ملازمین کی تنخواہوں اورمراعات میں فرق کے خلاف دائر درخواست پر چیف سیکرٹری پنجاب سے جواب طلب کر لیاہے۔جسٹس شمس محمود مرزا نے کیس کی سماعت کی،درخواست گزاروں کے وکیل ملک اویس خالد نے موقف اختیار کیا کہ حکومت پنجاب نے ماسوائے سول سیکرٹریٹ پنجاب بھر کے دیگر اداروں سے تعلق رکھنے والے ملازمین کے ساتھ امتیازی سلوک کی پالیسی کو نافذ کر رکھا ہے،انہوں نے بتایا کہ پنجاب کے سیکرٹریٹ میں سرکاری ملازمین کو خصوصی ہاؤس رینٹ الاؤنس، خصوصی کنوینس الاؤنس اور سپیشل الاؤنسز سے نوازاجا رہا ہے،سیکرٹریٹ کے ملازمین کو زائد تنخواہیں دے کر دیگر محکموں کے ملازمین سے امتیازی سلوک برتا جا رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ آئین کے تحت کسی شخص سے امتیازی سلوک نہیں برتا جا سکتا،انہوں نے استدعا کی کہ عدالت پنجاب کے سرکاری ملازمین کو یکساں بنیادوں پر الاؤنسز اور تنخواہیں ادا کرنے کا حکم دے۔

تنخواہوں میں فرق

مزید : علاقائی