اسحق ڈار کیخلاف اثاثہ جات ریفرنس میں2 گواہوں کے بیانات قلمبند

اسحق ڈار کیخلاف اثاثہ جات ریفرنس میں2 گواہوں کے بیانات قلمبند

اسلام آباد (این این آئی)احتساب عدالت میں اسحق ڈارکیخلاف اثاثہ جات ریفرنس کی سماعت کے دوران 2 گواہوں کے بیانات اورجرح مکمل کرلی گئی ،عدالت نے مزید 5 گواہوں کو طلب کرتے ہوئے سماعت 4 جولائی تک ملتوی کر دی۔ سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈارکیخلاف اثاثہ جات ریفرنس کی سماعت احتساب عدالت میں ہوئی اس موقع پر ریفرنس میں نامزد تینوں شریک ملزمان بھی عدالت میں پیش ہوئے،ملزم منصوررضا کے وکیل قاضی مصباح نے گواہ اشتیاق علی پرجرح کی۔عدالت نے استفسار کیا کہ اسحاق ڈارکیخلاف انٹرپول کے ذریعے کارروائی کی جارہی ہے؟ گواہ کے مطابق 16 نومبر 2001کواسحاق ڈارکے اکاؤنٹ میں 4لاکھ 40ہزارکی ٹرانزیکشن ہوئی جس پر اسحق ڈار کے وکیل نے کہا کہ ترسیل کریڈٹ کارڈ کی ایک انٹری تھی جو اسی روز واپس کر دی گئی تھی۔ملزم منصوررضا کے وکیل قاضی مصباح نے 2 گواہوں کے بیانات اورجرح مکمل کرلی گئی ،جن میں اشتیاق علی اور غزالی عزیزشامل ہیں ۔عدالت نے مزید 5 گواہوں کو طلب کرتے ہوئے سماعت 4 جولائی تک ملتوی کر دی۔

اسحق ڈار /اثاثہ جات کیس

مزید : علاقائی