استغاثہ ثابت نہیں کر سکا بچے نواز شریف کے زیر کفالت ہیں،خواجہ حارث

استغاثہ ثابت نہیں کر سکا بچے نواز شریف کے زیر کفالت ہیں،خواجہ حارث

اسلام آباد (این این آئی)ایون فیلڈ ریفرنس میں مسلم لیگ (ن) کے قائد اور سابق وزیراعظم محمد نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث نے دلائل مکمل کرتے ہوئے کہاہے کہ استغاثہ ثابت نہیں کر سکا کہ بچے نواز شریف کی زیر کفالت ہیں، واجد ضیاء نے بھی کہا کہ بچوں کے زیر کفالت ہونے کے ثبوت نہیں،تسلیم کیا گیا میاں شریف بچوں کو جیب خرچ دیتے تھے، ہمیں دفاع کی ضرورت نہیں ہے، ہمارے خلاف ایک بھی چیز ثابت کریں تو دفاع پیش کرینگے۔احتساب عدالت میں گزشتہ روز شریف خاندان کیخلاف ایون فیلڈ ریفرنس کی سماعت ہوئی۔نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث نے کیس میں اپنے حتمی دلائل دیتے ہوئے کہا کہ استغاثہ ثابت نہیں کر سکا کہ بچے نواز شریف کے زیر کفالت ہیں، واجد ضیاء نے بھی کہا کہ بچوں کے زیر کفالت ہونے کے ثبوت نہیں۔انہوں نے کہاکہ واجد ضیاء نے یہ بھی تسلیم کیا کہ میاں شریف بچوں کو جیب خرچ دیتے تھے۔انہوں نے کہا کہ ہمیں دفاع کی ضرورت نہیں ہے، ہمارے خلاف ایک بھی چیز ثابت کریں تو دفاع پیش کریں گے۔خواجہ حارث نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ یہ بریت کا کیس ہے کیونکہ اس کیس میں کوئی شہادت پیش نہیں کی گئی۔انہوں نے اپنے دلائل مکمل کرنے پر عدالت کا شکریہ ادا کیا جبکہ نیب پراسیکیوٹر سردار مظفر نے بھی خواجہ حارث کو دلائل مکمل کرنے پر مبارکباد دی۔سردار مظفر نے کہا کہ اگر کوئی غلطی ہوئی ہو تو معافی کا طلبگار ہوں۔ایون فیلڈ ریفرنس میں مریم نواز کے وکیل امجد پرویز (آج) جمعرات کو حتمی دلائل کا آغاز کریں گے۔

ایون فیلڈ ریفرنس

مزید : علاقائی