ایم ڈی اے حکام کی نااہلی ، فاطمہ جناح تاؤن منصوبہ برباد ، الاٹیز 13سال سے خوار

ایم ڈی اے حکام کی نااہلی ، فاطمہ جناح تاؤن منصوبہ برباد ، الاٹیز 13سال سے خوار

ملتان ( سٹاف رپورٹر) ایم ڈی اے حکام کی غفلت ‘ لاپروائی اور نااہلی سے فاطمہ جناح ٹاؤن آباد نہ ہو سکا ۔ اربوں روپے لاگت کا منصوبہ برباد ہو گیا۔13سال گزرنے کے باوجود ترقیاتی کام مکمل نہ ہو سکے ۔10 سال گزرنے کے باوجود 350الاٹیز کو پلاٹ نہیں مل سکے۔تفصیل کے مطابق ایم ڈی اے حکام نے سنگین غفلت ‘ لاپروائی اور نا اہلی کا مظاہرہ کرتے ہوئے اربوں روپے لاگت کا فاطمہ جناح ٹاؤن کا منصوبہ برباد کر کے رکھ دیا (بقیہ نمبر22صفحہ12پر )

ہے۔13سال گزرنے کے باوجود آبادی نہیں ہو سکی اور علاقہ جنگل کا منظر پیش کر رہا ہے۔2005میں فاطمہ جناح ٹاؤن کا منصوبہ شروع ہوا اور 13سال گزرنے کے باوجود بجلی کی فراہمی کا منصوبہ مکمل نہیں ہو سکا ۔ کئی بلاکس تاحال بجلی سے محروم ہیں اور سوئی گیس تو تاحال فراہم نہیں کی جا سکی ہے۔اس کے علاوہ نہ ہی پارکس‘ مساجد‘سکولز ‘ہاسپٹل بنائے گئے ہیں ۔ گرین بیلٹس بھی نہیں بن سکی ہیں ۔ کروڑوں روپے کی لاگت سے تعمیر سڑکیں اور گلیاں ٹوٹ پھوٹ چکی ہیں ۔ کئی پلاٹس میں 10سے30فٹ تک گڑھے ہیں ۔ فاطمہ جناح ٹاؤن فیز ٹو کا منصوبہ 2008میں شروع ہوا اورتقریباً350الاٹیز سے 60ہزار روپے مرلہ کے ریٹ کے تناسب سے رقوم وصول کی گئیں ۔ الاٹیز نے اقساط میں رقوم ادا کردیں مگر اراضی مالکان نے عدلیہ سے حکم امتناعی لے لیا اور آج تک یہ مسئلہ حل نہیں ہو سکا اور 350الاٹیز کو تاحال یہ ہی معلوم نہیں ہو سکا کہ ان کے پلاٹس کہاں ہیں ‘ ان کو یقین ہی نہیں ہے کہ پلاٹس ملیں گے بھی یا نہیں اور وہ ایم ڈی اے آفس کے دھکے کھا رہے ہیں ۔ایم ڈی اے ذرائع کے مطابق تمام معاملات کلیئر کرکے منصوبہ شروع کیاجانا چاہئیے تھا ۔ ایم ڈی اے حکام جان بوجھ کر یہ مسئلہ لٹکائے ہوئے ہیں ۔ بتایا گیاہے کہ ایم ڈی اے کے کرتا دھرتاؤں نے کرپشن کرتے ہوئے مال پانی بنایا اور پرائیویٹ ہاؤسنگ سکیمو ں کے مالکان کے ساتھ ملی بھگت کی تاکہ نزدیکی ہاؤسنگ سکیمو ں کا کاروبار چمک اٹھے اور ایسا ہی ہوا۔فاطمہ جناح ٹاؤن کا منصوبہ 13سال بعد بھی نامکمل ہے اور قریبی ہاؤسنگ سکیموں کے مالکان کی چاندی ہے اور بیشتر سکیمیں غیر قانونی ہیں اور عوام کو دھڑا دھڑ پلاٹس فروخت کئے جا رہے ہیں جبکہ فاطمہ جناح ٹاؤن ابھی تک آباد نہیں ہو سکا جہاں الو بول رہے ہیں جس کے باعث لوگ یہاں پلاٹس لینے کو تیار نہیں ہیں جبکہ فاطمہ جناح ٹاؤن ٹو میں الاٹیز کی رقوم ڈوب چکی ہیں ۔ متاثرین نے چیئرمین نیب سے مطالبہ کیا ہے کہ کرپشن کرتے ہوئے فاطمہ جناح ٹاؤن کے منصوبے کو جان بوجھ کر ناکام کرنے کے ذمہ داروں کا تعین کرکے ان کے خلاف سخت ترین کارروائی کی جائے اور متاثرین کو ان کا حق دلایاجائے ۔ مزید براں حکومت پنجاب سخت نوٹس لے کراس منصوبے کو پایہ تکمیل تک پہنچائے۔

Ba

مزید : ملتان صفحہ آخر