نظریہ اور بقائے پاکستان کی سیاست کرنے آئے ہیں‘ سیف اللہ خالد

نظریہ اور بقائے پاکستان کی سیاست کرنے آئے ہیں‘ سیف اللہ خالد

ملتان(سٹی رپورٹر)ملی مسلم لیگ کے حمایت یافتہ،اللہ اکبر تحریک کے نامزد5 امیدواروں کوملتان کے مختلف انتخابی حلقوں کے پارٹی ٹکٹ جاری کردیے گئے۔ قومی اسمبلی کے دو جبکہ صوبائی اسمبلی سے 3اُمیدواروں کو ٹکٹ دیے گئے ہیں۔ کوکاکولا فیکٹری وہاڑی روڈ میں منعقدہ ورکرز کنونشن میں ملی مسلم(بقیہ نمبر23صفحہ12پر )

لیگ کے صدر سیف اللہ خالد اور جماعۃ الدعوۃ کے مرکزی رہنما پروفیسر حافظ عبدالرحمان مکی نے نامزد اُمیداورں میں پارٹی ٹکٹ تقسیم کیے ۔ جن حلقوں سے اُمیدواروں کو ٹکٹ جاری کیے گئے ہیں ان میں قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 155سے محمد ارشد بھٹی،این اے156سے چوہدری عبداللہ میو،پی پی 215سے چوہدری محمد عمران میو،پی پی216اور 217 سے ملک عبدالاحد بھٹہ،پی پی 219سے محمد آصف واہلہ کو ٹکٹ جاری کیے گئے ہیں۔صدر ملی مسلم لیگ سیف اللہ خالد نے ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم نظریہ پاکستان اور بقائے پاکستان کی سیاست کرنے آئے ہیں۔آزادی کشمیر کی جدوجہد کی حمایت اور تعلیم ،صحت کے مسائل کا حل ملی مسلم لیگ کا بنیادی منشور ہے۔2018ء کا الیکشن پاکستان کے وفاداروں اورنظریہ پاکستان کے غداروں کے درمیان ہوگا۔گالم گلوچ اور الزامات کی سیاست کی بجائے اتحاد و اتفاق کی سیاست کریں گے۔ملی مسلم لیگ 265امیدواروں کے ساتھ بھر پور طریقے سے الیکشن میں حصہ لے رہی ہیں۔کرپشن کے سردار اور ملک کے غدار عوام کی نمائندے نہیں ہو سکتے۔کنونشن سے جماعۃ الدعوۃ کے مرکزی رہنما پروفیسر حافظ عبدالرحمان مکی،مولانا نصر جاوید ،ابو معاذ عمران نے بھی خطاب کیا۔بعد ازاں صدر ملی مسلم لیگ سیف اللہ خالد نے مرکزی الیکشن آفس کا بھی افتتاح کیا۔سیف اللہ خالد کا کہنا تھا کہ لا الہ الا اللہ کی بنیاد پر اتحاد قائم کریں گے۔آئینی و قانونی طریقے سے اپنے حقوق کی جنگ لڑیں گے۔جولائی 2018 تبدیلی کا مہینہ ہے۔ ووٹرز سوچ سمجھ کر فیصلہ کریں کہ وہ آئندہ پانچ سال تک اقتدار کس کے حوالے کرنا چاہتے ہیں۔ ماضی میں نااہل قیادت نے ملک و قوم کو متعدد مسائل سے دوچار کیا۔ صادق و امین قیادت کو منتخب کرانا ضروری ہوچکا ہے۔ ملی مسلم لیگ انتخابات کے بعد عوام کو نظر انداز نہیں کرے گی۔

سیف اللہ خالد

مزید : ملتان صفحہ آخر