ملتان: جعلی دیسی گھی کی کھلے عام فروخت‘ شہری کینسر میں مبتلا ہونے لگے

ملتان: جعلی دیسی گھی کی کھلے عام فروخت‘ شہری کینسر میں مبتلا ہونے لگے

ملتان( سٹاف رپورٹر)ڈیرہ اڈا شیرشاہ روڈ پر جعلی دیسی گھی ‘ کریم اور مکھن فروخت ہو نے لگا ۔دکاندار پیسے کے لالچ میں سادہ لوح عوام کی صحت سے کھیلنے لگے۔ جعلی دیسی گھی کوسندھی دیسی (بقیہ نمبر37صفحہ7پر )

گھی کے نام سے فروخت کیاجا رہا ہے ۔ تفصیل کے مطابق چوک عزیز ہوٹل سے ڈیرہ اڈا کے درمیان شیر شاہ روڈ پر جگہ جگہ جعلی دیسی گھی ‘ کریم اور مکھن فروخت کیاجا رہا ہے ۔ کئی دکانیں کھلی ہوئی ہیں ۔ فراڈیوں نے جو ریٹ لسٹ آویزاں کی ہے ۔ اس پر دیسی گھی کے’’ نرخ 720روپے فی کلو ‘‘درج ہیں مگر خفیہ طور پر جعلی دیسی گھی بھی فروخت کیاجا رہا ہیجس کا ریٹ 220روپے فی کلو ہے۔ بناسپتی گھی میں کیمیکل ڈال کر اسے سندھی دیسی گھی کا نام دے کر فروخت کیاجا رہا ہے۔ اسی طرح جعلی مکھن 160روپے فی کلو فروخت کیاجا رہا ہے۔ سادہ لوح افراد جعلی دیسی گھی اورمکھن کوسستا جان کر خرید رہے ہیں جو کینسر سمیت مہلک امراض کا سبب بن رہا ہے ۔سادہ لوح گاہک یہ بھی نہیں جانتے کہ 220روپے فی کلو دیسی گھی اور 160روپے فی کلو مکھن کیسے فروخت ہو سکتا ہے ۔ اس بارے میں طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ جعلی دیسی گھی تیار کرنے کے لئے جو کیمیکل استعمال کیاجاتا ہے وہ کینسر کاباعث بنتا ہے۔ عوام کی صحت سے کھیلنے والے ماہرین سرکاری اہلکاروں کو منتھلی دے کر عرصہ دراز سے گھناؤنا کاروبار کر رہے ہیں ۔عوامی و سماجی حلقوں نے پنجاب فوڈ اتھارٹی کی توجہ اس طرف مبذول کراتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ جعلی دیسی گھی ‘ کریم اور مکھن کی فروخت بند کرائی جائے ۔اس بارے میں پنجاب فوڈ اتھارٹی کے حکام کا کہنا ہے کہ جعلی دیسی گھی ‘ کریم اور مکھن فروخت کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن کیاجائے گا ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر