مہمند ،بائیزئی کے عوام کو سہولتوں کی فراہمی اولین ترجیح ہے ،عمائدین

مہمند ،بائیزئی کے عوام کو سہولتوں کی فراہمی اولین ترجیح ہے ،عمائدین

ضلع مہمند ( نمائندہ پاکستان) ضلع مہمند، پاک افغان تجارتی شاہراہ گورسل کو فوری کھول دیا جائے۔ بائیزئی سب ڈویژن کے عوام کو زندگی کی بنیادی سہولیات فراہم کرنا اولین ترجیح ہوگی۔ مہمند قوم کی بہترین نمائندگی کر کے پسماندہ عوام کو ترقی کی راہ پر گامزن کرینگے۔ ان خیالات کا اظہار این اے 42 کے نامزد اُمیدوار و سابقہ سنیٹر حاجی عبدالرحمن فقیر ، ملک حاجی سلطان ، ملک حاجی احمد خویزئی و دیگر عمائدین نے بائیزئی گرینڈ جرگے سے خطاب کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ قبائلی ضلع مہمند کے پاک افغان سرحدی دیہات زندگی کی تمام سہولیات سے محروم ہیں۔ دہشت گردی کی جنگ کے بعد تا حال یہاں کے لوگوں کی آبادکاری ممکن نہیں ہوئی ہے۔ اس جدید دور میں بھی یہاں کے رہائشی صحت، تعلیم، پینے کے پانی، بجلی، مواصلات سمیت دیگر بنیادی سہولیات سے محروم ہیں۔ ایک طرف قبائلی علاقوں میں پاک افغان تجارتی شاہراہیں کھولے ہیں مگر قبائلی ضلع مہمند کی تجارتی شاہراہ گورسل تا حال بند پڑا ہے۔ جس کی وجہ سے یہاں کے ہزاروں لوگ بے روزگاری کی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم انفرادی کاموں کا خاتمہ کر کے اجتماعی کاموں کو ترجیح دینگے۔ برائے نام ترقیاتی منصوبوں سے عوام کی تقدیر بدل نہیں سکتی ۔ اگر قوم نے ہم پر اعتماد کیا تو ہم مہمند عوام کے تمام مشکلات کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کا عہد کرتے ہیں۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ فوری طور پر پاک افغان تجارتی شاہراہ گورسل کو تجارت کی غرض سے کھولے تاکہ یہاں کے پسماندہ عوام کی معیار زندگی بہتر ہو سکیں۔ بصورت دیگر ہم ان کی بحالی کیلئے کسی اقدام سے گریز نہیں کرینگے۔ کیونکہ پاک افغان تجارتی شاہراہ گورسل سے ہمارے ہزاروں لوگوں کا روزگار جڑا ہوا ہے۔ جلسے میں مختلف اقوام کے لوگوں کی کثیر تعداد میں شرکت پر مقررین نے اُن کا شکریہ ادا کیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر