عام انتخابات ،امیدواروں کے کاغذات نامزدگی پر فیصلوں کیخلاف اپیلیں منظور

عام انتخابات ،امیدواروں کے کاغذات نامزدگی پر فیصلوں کیخلاف اپیلیں منظور

پشاور(نیوزرپورٹر) پشاورہائی کورٹ کے جسٹس سیدافسرشاہ اور جسٹس مس مسرت ہلالی پرمشتمل دومختلف الیکشن ٹربیونلز نے 2018ء کے عام انتخابات کے لئے امیدواروں کے کاغذات نامزدگی پرریٹرننگ افسروں کے فیصلوں کے خلاف متعدد اپیلیں منظورکرلی ہیں فاضل جسٹس صاحبان نے بدھ کے روز مختلف اپیلوں کی سماعت کی اس موقع پر ضلع ناظم پشاورارباب عاصم کی نااہلی کے لئے دائراپیل کی سماعت کی گئی ٹربیونل کو بتایاگیاکہ ارباب عاصم پی ٹی سی ایل کے نادہندہ ہیں جبکہ ارباب عاصم نے عدالت کو بتایا کہ وہ عام انتخابات میں حصہ نہیں لے رہے ہیں جس پران کے خلاف اعتراض خارج کردیاگیانوشہرہ سے سابق رکن صوبائی اسمبلی سراج محمدپردوہری شہریت رکھنے کاالزام تھااس موقع پر سراج محمد نے بتایا کہ دوسری شہریت وہ واپس کرچکے ہیں اوراس کے تحت وہ 2013ء میں بھی انتخابات میں حصہ لے چکے ہیں جس پرٹربیونل نے اعتراض خارج کردیااورالیکشن لڑنے کی اجازت دے دی ایم ایم اے کے امیدوار ارباب شہریار کے کاغذات نامزدگی منظورکرلئے گئے ریٹرننگ افسرکے پاس اس کے بیٹے نے کاغذات داخل کئے تھے عبدالحق اورعبدالعزیزکوہاٹ سے امیدوارہیں جن پرجی آئی ڈی سی کی مد میں کروڑوں روپے بقایاجات ہیں اس موقع پر ان کے وکلاء سلیم شاہ وغیرہ نے عدالت کو بتایاکہ جی آئی ڈی سی کامعاملہ سپریم کورٹ میں زیرسماعت ہے جس پرتاحال فیصلہ نہیں آیاجس پرعدالت نے انہیں الیکشن میں حصہ لینے کی اجازت دے دی ا سی طرح ٹربیونل نے تاج نواب کوبھی الیکشن لڑنے کی اجازت دے دی

مزید : پشاورصفحہ آخر