سپریم کورٹ نے دانیال عزیز کو توہین عدالت کا مرتکب قرار دیتے ہوئے سزا سنا دی

سپریم کورٹ نے دانیال عزیز کو توہین عدالت کا مرتکب قرار دیتے ہوئے سزا سنا دی
سپریم کورٹ نے دانیال عزیز کو توہین عدالت کا مرتکب قرار دیتے ہوئے سزا سنا دی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )سپریم کورٹ نے سابق وفاقی وزیر نجکاری دانیال عزیز کو توہین عدالت کا مرتکب قرار دیدیا اور عدالت کے برخاست ہونے تک قید کی سزا سنا دی ہےجس کے بعد وہ پانچ سال کیلئے نا اہل ہو گئے ہیں ۔

جسٹس عظمت سعید شیخ کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3 رکنی بنچ نے گزشتہ ماہ 3 مئی کو دانیال عزیز کے خلاف توہین عدالت کیس کا فیصلہ محفوظ کیا تھا، جو آج سنایا گیا۔  عدالت نے مسلم لیگ (ن) کے رہنما دانیال عزیز کو توہین عدالت کیس میں نااہل قرار دیدیا، عدالت نے دانیال عزیز کو عدالت کے اٹھنے تک کی سزا دی جب کہ دانیال عزیز اب 5 سال کے لیے الیکشن نہیں لڑسکیں گے۔

فیصلے کے متن میں کہاگیاہے کہ دانیال عزیز نے انصاف کی فراہمی کے عمل میں مداخلت کی ، عدلیہ اور ججز کی تضحیک کی اس لیے سابق وفاقی وزیر آرٹیکل 204 کے تحت توہین عدالت کے مرتکب ہیں۔

آج سماعت کے آغاز پر دانیال عزیز عدالت میں موجود نہیں تھے، جس پر سپریم کورٹ نے ریمارکس دیئے کہ ملزم کے آنے پر فیصلہ سنایا جائے گا۔بعدازاں دانیال عزیز بھی کمرہ عدالت میں پہنچ گئے۔

اس موقع پر سپریم کورٹ میں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں اور بکتربند گاڑی بھی سپریم کورٹ کی پارکنگ میں موجود ہے۔

یاد رہے کہ چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے دانیال عزیز کے ٹی وی ٹاک شوز کے دوران عدلیہ مخالف بیانات پر 2 فروری کو توہین عدالت کا از خود نوٹس لیتے ہوئے سپریم کورٹ کا 3 رکنی بینچ تشکیل دیا تھا۔

13 مارچ کو دانیال عزیز پر توہین عدالت کی فرد جرم عائد کی گئی تھی، تاہم انہوں نے صحت جرم سے انکار کردیا تھا۔ دانیال عزیز کے وکیل نے عدالت میں موقف اختیار کیا تھا کہ ان کے موکل نے صرف عدالتی فیصلوں پر تنقید کی تھی، کسی جج سے متعلق تضحیک آمیز بیان نہیں دیا۔ 3 مئی کو عدالت عظمی نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا تھا۔

واضح رہے کہ اس سے قبل یہ سزا یوسف رضا گیلانی کو 2012 میں توہین عدالت کے کیس میں سنائی گئی تھی ۔

مزید : اہم خبریں /قومی /Breaking News