عمران خان کی پاکپتن دربار پر سجدے کی ویڈیو وائرل ہوئی تو ریحام خان بھی میدان میں آ گئیں، ٹوئٹر پر ایسا کام شروع کر دیا کہ کپتان تو کیا، کھلاڑی بھی آگ بگولہ ہو جائیں گے

عمران خان کی پاکپتن دربار پر سجدے کی ویڈیو وائرل ہوئی تو ریحام خان بھی میدان ...
عمران خان کی پاکپتن دربار پر سجدے کی ویڈیو وائرل ہوئی تو ریحام خان بھی میدان میں آ گئیں، ٹوئٹر پر ایسا کام شروع کر دیا کہ کپتان تو کیا، کھلاڑی بھی آگ بگولہ ہو جائیں گے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) چیئرمین عمران خان کی بابافرید گنج شکرؒ کے دربار پر حاضری دی تو درگاہ میں داخل ہونے سے پہلے انہوں نے دہلیز پر سجدہ کیا تو ویڈیو وائرل ہو گئی جس کے بعد بحث کا ایک طوفان برپا ہے اور ہر کوئی اپنی رائے دینے میں مصروف ہیں۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔فردوس عاشق اعوان نے ان ”چاچاجی“ پر ظلم کے ایسے پہاڑ توڑ دئیے جس کی کوئی مثال نہیں ملتی، گلاب جامن دیکھ کر گلاب سا منہ کھولا تو اگلے ہی لمحے ارمانوں کا قتل ہو گیا، دیکھ کر آپ کے پیٹ میں ہنسی سے مروڑ اٹھنے لگیں گے 

عمران خان کی سابق اہلیہ ریحام خان بھی یہ ویڈیو وائرل ہونے کے بعد سرگرم ہو گئی ہیں اور ٹوئٹر پر بھرپور ’مہم‘ جاری رکھے ہوئے اور اس حوالے سے متعدد ٹویٹس کو ’ری ٹویٹس‘ کرنے کیساتھ ساتھ اپنے تاثرات کا اظہار کرنے اور سوشل میڈیا صارفین کیساتھ بحث و مباحثے میں بھی مصروف ہیں۔

ریحام خان نے ایک ٹوئٹر صارف بلال عظمت کی جانب سے شیئر کی جانے والی عمران خان کی ویڈیو کو اپنے ٹوئٹر ہینڈل پر شیئر کروایا جس میں بلال عظمت نے لکھا تھا ”۔۔۔ نیازی صاحب کیلئے میں کہنا چاہتا ہوں کہ ہمیشہ کی طرح ان کے قوم و فعل میں تضاد ہے۔“

پھر انہوں نے ’کامن مسلم‘ نامی ایک صارف کی ٹویٹ کو ’ری ٹویٹ‘ کیا جو کچھ اس طرح ہے ”یا اللہ توبہ۔۔۔ یہ کیسا حرص اقتدار اور یہ کیسا اسلام اور یہ کیسی عقل، اس سے پاکستان چلانے کا سوچ رکھنا، اس کے سپورٹرز کی عقل پر ماتم، اس کا تو پورا آخرت برباد لگتا ہے“

ریحام خان نے اس کے بعد مولانا شاہ احمد نورانی کی ایک ویڈیو شیئر کی جس میں وہ مزارات پر حاضری، سجدے اور چومنے سے متعلق وضاحت کرتے نظر آ رہے ہیں۔ ریحام خان نے یہ ویڈیو شیئر کرتے ہوئے لکھا ”بالکل حرام ہے۔۔۔ حضور پاکﷺ کے روزہ مبارک میں بھی سجدہ صرف قبلہ کی سمت میں اور دعا بھی صرف قبلہ کی طرف کی جاتی ہے۔“

اس ویڈیو میں مولانا شاہ احمد نورانی ایک خاتون کے سوال کا جواب دیتے ہوئے فرماتے ہیں ”جہاں تک مزار پر سر جھکانے، سجدہ کرنے کا اور چومنے کا تعلق ہے، یہ بالکل حرام ہے اور سجدہ تو بالکل حرام ہے۔ اگر سجدہ عبادت کی نیت سے ہے تو شرک ہے اور تعزیم کی نیت سے ہے تو حرام ہے، بوسہ دینا اور سرجھکانا جائز نہیں ہے۔

جہاں تک مزارات پر جانے کی بات ہے تو ضرور جانا چاہئے کیونکہ وہ اللہ کے ولی تھے اور ان کیساتھ ہماری تاریخ وابستہ ہے۔ یہی بزرگ تھے جو دور دراز کا سفر کر کے اس خطے میں تشریف لائے اور یہاں بسنے والوں کے دلوں کی دنیا بدل دیا۔ اس خطے میں مجاہدین بھی آئے جنہوں نے تلوار کے زور پر اسلام پھیلایا اور جغرافیائی نقشوں کو بدلا مگر ان بزرگوں نے لوگوں کے دلوں کی دنیا بدل دی۔ اس لئے ان کے مزارات پر جانا اور صرف فاتح پڑھنا شرعی طور پر ثابت ہے، اس سے آگے کچھ نہیں ہے۔“

ریحام خان نے یہ ویڈیو شیئر کرنے کے بعد زبیر شاہ آغا نامی صارف کی ایک ٹویٹ کو ری ٹویٹ کیا جو کچھ اس طرح ہے کہ ”اگر مزاروں پر سجدے کرنے سے کوئی وزیراعظم بن سکتا تو سہون شریف کے تمام چرسی وزیراعظم ہوتے“

مزید : ڈیلی بائیٹس /علاقائی /اسلام آباد /پنجاب /لاہور